Friday , November 17 2017
Home / Top Stories / ہندوستان کی اولین بلیٹ ٹرین پراجکٹ کا افتتاح

ہندوستان کی اولین بلیٹ ٹرین پراجکٹ کا افتتاح

ہند ۔ جاپان دفاعی تعلقات میں شدت اور پاکستان کے دہشت گرد گروپس کیخلاف تعاون میں اضافہ سے اتفاق

احمدآباد ۔ 14 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی اور وزیراعظم جاپان شینزو ایب نے آج ہندوستان کے اولین بلٹ ٹرین پراجکٹ کا افتتاح کیا۔ ایک ٹرین احمدآباد اور ممبئی کے درمیان چلائی جائے گی۔ مودی نے 1.10 لاکھ کروڑ روپئے مالیتی پرعزم پراجکٹ سے دونوں شہروں کے درمیان 7 سے 3 گھنٹے سفر کے وقفہ میں کمی کی امید ظاہر کی اور کہا کہ یہ ہندوستان کو جاپان کا ایک بڑا تحفہ ہے۔ سابرمتی کے اتھیلیکٹ اسٹیڈیم میں اس تقریب کے موقع پر جمع ہجوم سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم جاپان نے کہا کہ ہند۔ جاپان شراکت داری خصوصی، دفاعی اور عالمی ہے۔ انہوں نے دونوں قائدین کے مشترکہ طور پر بٹن دباکر سنگ میل کو بے نقاب کرنے کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایک طاقتور ہندوستان جاپان کے مفاد میں اور طاقتور جاپان ہندوستان کے مفاد میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ نریندر مودی ایک دوربین قائد ہیں۔ انہوں نے دو سال قبل ہندوستان میں اس تیز رفتار ٹرین کا فیصلہ کیا تھا تاکہ نیا ہندوستان تقلید کیا جاسکے۔ جاپان کی ستائش کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ جاپان ایسا دوست ہے جس نے 88 ہزار کروڑ روپئے کا قرض 0.1 فیصد شرح سود پر اس پراجکٹ کیلئے دیا ہے۔ مودی نے اپوزیشن پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بلٹ ٹرین پراجکٹ کے بارے میں اپوزیشن نے اپنے اندیشے ظاہر کئے ہیں۔ مودی نے کہاکہ 1964ء میں جاپان نے بلٹ ٹرین کا آغاز کیا اور اب یہ ٹیکنالوجی 15 ممالک میں موجود ہے۔ دونوں ممالک کے وزرائے اعظم نے ادارہ کا سنگ بنیاد بھی رکھا جو وڈودرا میں قائم کیا جائے گا

جہاں 4 ہزار افراد کو بلٹ ٹرین پراجکٹ کی تربیت دی جائے گی۔ مرکزی وزیر ریلوے پیوش گوئل، چیف منسٹر گجرات وجئے روپانی اور چیف منسٹر مہاراشٹرا دیویندر فرنویس اس موقع پر موجود تھے۔ گاندھی نگر سے موصولہ اطلاع کے بموجب ہندوستان اور جاپان نے آج 15 معاہدوں پر دستخط کئے تاکہ دفاعی شراکت داری وسیع البنیاد پر قائم کی جاسکے اور اتفاق کیا کہ ہند۔ ایشیائی کوچک علاقہ میں جہاں چین اپنی جارحیت میں اضافہ کرتا جارہا ہے، مستحکم تعاون کریں گے۔ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شینزو ایب اور نریندر مودی نے کہا کہ ہند۔ جاپان تعلقات صرف باہمی یا علاقائی شعبوں تک محدود نہیں ہیں۔ دونوں ممالک عالمی مسائل پر بھی قریبی تعاون کررہے ہیں۔ ایک اور خبر کے بموجب جاپان اور ہندوستان کے وزرائے اعظم نے اتفاق کیا کہ دہشت گرد گروپس جیسے القاعدہ اور جیش محمد پاکستان اور لشکرطیبہ کے خلاف باہمی تعاون میں شدت پیدا کی جائے گی۔ وزیراعظم نریندر مودی اور وزیراعظم جاپان شینزوایب نے پاکستان سے خواہش کی کہ وہ دہشت گرد حملوں کے ذمہ داروں کے خلاف بشمول ان افراد کے خلاف جو 2008ء کے ممبئی حملوں اور 2016ء کے پٹھان کوٹ حملوں میں ملوث تھے، کارروائی کی جائے گی۔ سالانہ دو رکنی چوٹی کانفرنس کے بعد جاری کردہ مشترکہ اعلامیہ میں دونوں ممالک نے سخت ترین لب و لہجہ میں دہشت گردی اور پرتشدد انتہاء پسندی کی بڑھتی ہوئی لعنت کی مذمت کی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT