Thursday , June 21 2018
Home / ہندوستان / ہندوستان کی قازقستان سے یورینیم کی سربراہی کے معاہدہ کی تجدید

ہندوستان کی قازقستان سے یورینیم کی سربراہی کے معاہدہ کی تجدید

نئی دہلی ۔ 6 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) نیوکلیئر برقی توانائی ری ایکٹرس کی ضرورت کی تکمیل کیلئے ہندوستان قازقستان کے ساتھ ایک معاہدہ کرے گا جس کے تحت 5 ہزار میٹرک ٹن یورینیم کی خریداری کی جائے گی۔ وزیراعظم نریندر مودی وسط ایشیائی ملک کا کل دورہ کررہے ہیں۔ ذرائع کے بموجب دونوں ممالک اپنے پرانے معاہدہ کی تجدید کریں گے، جس کے تحت قازقستان نے ہندوستان کو یورینیم سربراہ کی تھی۔ ہندوستان اور قازقستان پہلے ہی جنوری 2009ء سے سیول نیوکلیئر تعاون کرتے رہے ہیں۔ این پی سی آئی ایل اور قازق نیوکلیئر کمپنی قازا ٹام کرام نے ایک معاہدہ مفاہمت پر دستخط کئے تھے، جس کے تحت قازقستان کی کمپنی ہندوستانی ری ایکٹرس کیلئے یورینیم سربراہ کرتی تھی جس کے بعد کازا ٹام کرام نے 600 میٹرک ٹن یورینیم قام دھات کا مرتکب مادہ 2010-11ء میں سربراہ کیا۔ 2011-12ء میں 350، 2012-13ء میں 402.5 اور 2013-14ء میں 460 میٹرک ٹن یورینیم سربراہ کیا گیا۔ تاہم یورینیم سربراہی کا معاہدہ ڈسمبر 2014ء میں ختم ہوچکا ہے۔ ایک سینئر سرکاری عہدیدار کے بموجب ہندوستان قازقستان کے ساتھ اپنے معاہدہ کی تجدید کرے گا۔

TOPPOPULARRECENT