Thursday , November 15 2018
Home / Top Stories / ہندوستان کے عام انتخابات کے بعد دوستی کا ہاتھ بڑھانے کا فیصلہ

ہندوستان کے عام انتخابات کے بعد دوستی کا ہاتھ بڑھانے کا فیصلہ

افغانستان اور ہندوستان کے بشمول تمام پڑوسیوں کیساتھ امن کا عہد، ریاض میں عمران خان کا خطاب

ریاض ؍ اسلام آباد 23 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے آج کہاکہ ہندوستان 2019 کے لوک سبھا انتخابات کے بعد پھر ایک مرتبہ دوستی کا ہاتھ بڑھائیں گے کیوں کہ وہ سمجھتے کہ بات چیت کے لئے ان کی پیشکش محض اس لئے مسترد کردی گئی کیوں کہ پاکستان اس پڑوسی ملک میں ایک انتخابی موضوع ہے۔ عمران خان نے ریاض میں ’مستقبل کی سرمایہ کاری مساعی‘ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ علاقائی امن و استحکام کے لئے وہ بشمول ہند و افغان اپنے تمام پڑوسیوں کے ساتھ امن کے خواہاں ہیں۔ ریڈیو پاکستان نے ان کے حوالہ سے کہاکہ ’’ہندوستان کے ساتھ امن ان دونوں ملکوں کو اسلحہ کی دوڑ میں ملوث ہونے کے بجائے اپنے وسائل کو انسانی ترقی کے لئے استعمال کرنے میں مدد دے گا۔ اس طرح افغانستان کے ساتھ امن پاکستان کو باہمی اقتصادی و تجارتی سرگرمیوں کے لئے وسط ایشیائی ممالک تک آسان رسائی میں مدد دے گا۔ عمران خان نے ہندوستان سے دوستی کی پیشکش کی تھی جو مسترد کردیا گیا تھا۔ اُنھوں نے اگسٹ میں اقتدار سنبھالنے کے بعد وزیراعظم نریندر مودی کے نام اپنے مکتوب میں ستمبر کے دوران اقوام متحدہ کے اجلاس عام کے موقع پر دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ کے درمیان بات چیت کی تجویز پیش کی تھی۔ ہندوستان باہمی اجلاس کی یہ تجویز قبول بھی کرلیا تھا لیکن اس کی قبولیت کے چند ہی گھنٹوں میں جموں و کشمیر میں ایک دہشت گرد حملے میں تین ملازمین پولیس کی ہلاکت کے بعد نیویارک میں اپنے وزراء خارجہ کا یہ اجلاس منسوخ کرنا پڑا تھا۔ ایکسپریس ٹریبیون نے وزیراعظم کے حوالے سے کہاکہ ’’اُنھوں (عمران خان) نے اس منسوخی کو ہندوسںتان میں دونوں کے لئے مخالف پاکستان پروپگنڈہ کا نتیجہ قرار دیا تھا‘‘۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT