Friday , November 24 2017
Home / دنیا / ہندوستان کے پاس کافی نیوکلیئر اسلحہ موجود :امریکہ

ہندوستان کے پاس کافی نیوکلیئر اسلحہ موجود :امریکہ

واشنگٹن 3 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان نے 2014 ء تک کافی اسلحہ جو پلوٹونیم کے زمرہ کے تحت آتا ہے، حاصل کرلیا ہے۔ اُس کے اسلحہ خانہ میں 75 تا 125 نیوکلیر ہتھیار بنانے کے قابل اشیاء موجود ہیں۔ امریکہ کی ایک دانشوروں کی تنظیم نے کہاکہ ہندوستان دنیا کے سب سے بڑے برقی توانائی پروگراموں میں سے ایک رکھتا ہے جو ترقی پذیر ممالک میں موجود ہیں۔ ادارہ برائے سائنس و بین الاقوامی صیانت کے بموجب ہندوستان کے نیوکلیر اسلحہ کے ذخیرہ کے تخمینہ سے یہ نتیجہ اخذ کیا جاسکتا ہے کہ اِس کے پاس پلوٹونیم زمرہ کے ہتھیاروں کا ذخیرہ موجود ہے۔ جس کے نتیجہ میں ایک تخمینہ کے بموجب 138 نیوکلیر ہتھیاروں کے مماثل ہتھیار تیار کئے جاسکتے ہیں۔ جن کا دائرہ کار 110 تا 175 ہتھیاروں کے مساوی ہوگا۔ دانشوروں کی تنظیم نے اپنی رپورٹ کل جاری کی ہے۔ تاہم نیوکلیر ہتھیاروں کی درست تعداد جو ہندوستان میں پلوٹونیم زمرہ کے ہتھیاروں کے ذخیرہ سے تیار کئے ہیں، اس سے کم بھی ہوسکتی ہے۔ ہتھیاروں کی تیاری میں پلوٹونیم کی مقدار کا حساب کرنے پر اور اس کے ذخائر کا اندازہ لگانے پر یہ سمجھنا واجبی ہوگا کہ صرف تخمینہ کے مطابق یورانیم معیار کے ہتھیاروں کے ذخیرہ کا 70 فیصد نیوکلیر ہتھیاروں کی شکل میں ہوسکتا ہے۔ پیش قیاسی کی گئی ہے کہ پلوٹونیم زمرہ کے 97 ہتھیاروں سے 2014 ء کے ختم تک تقریباً 77 تا 123 ہتھیار تیار کئے گئے تھے۔اس کا مطلب یہ ہے کہ 75 تا 125 دائرہ کار کے نیوکلیر ہتھیاروں کے ساتھ 100 نیوکلیر ہتھیار موجود ہیں۔

TOPPOPULARRECENT