Wednesday , December 13 2017
Home / دنیا / ہندوستا نی کمپنیوں کے HIB ویزا پر پابندی کیلئے بل پیش

ہندوستا نی کمپنیوں کے HIB ویزا پر پابندی کیلئے بل پیش

واشنگٹن ۔ 9جولائی ۔(سیاست ڈاٹ کام) امریکی قانون سازوں کے ایک گروپ نے ایوان نمائندگان میں ایک بل متعارف کیا ہے جو اگر منظور کرلیا جائے تو ہندوستانی کمپنیوں کو H-IB اور LI ویزا پر آئی ٹی پروفیشنلس کی خدمات حاصل کرنے سے روکا جاسکے گا ۔ ڈیموکریٹک کانگریس رکن پاسکریل اور ریپبلکن ڈانارو پرابچر نے یہ بل پیش کیا ہے اس کے ذریعہ اگر کسی کمپنی میں 50 سے زائد افراد ہو اور 50 فیصد سے زاسٹافHIB اور L-I ویزا کا حامل ہو تو انھیں H-IB ویزا کے ذریعہ ملازمین کی خدمات حاصل کرنے پر امتناع رہے گا ۔ چونکہ بڑی ہندوستانی آئی ٹی کمپنیاں زیادہ تر H-IBاور L-I ویزا پر انحصار کرتی ہیں اس لئے ان کی تجارت ہی زیادہ متاثر ہوں گی ۔ قابل غور مسئلہ یہ ہے کہ یہ بل جن دو ارکان نے پیش کیا ان میں ڈیموکریٹک رکن کا تعلق نیوجرسی اور ریپبلکن رکن کا تعلق کیلی فورنیا سے ہے اور یہاں ہندنژاد امریکیوں کی کافی تعداد رہتی ہے۔ اس بل کو صدر برک اوباما کی دستخط کے ذریعہ قانون کی شکل دیئے جانے سے قبل سینٹ میں منظوری ضروری ہے ۔ پاسکریل نے کہا کہ امریکہ بے شمار باصلاحیت ہائی ٹیک پروفیشنلس تیار کررہا ہے لیکن وہ بیروزگار ہیں۔ ان سورسنگ اور غیرملکی ورکرس کا استحصال کرتے ہوئے بعض تجارتی ادارے ویزا پروگرام کا بیجا استعمال کررہے ہیں اور اپنے فائدہ کیلئے ہمارے باصلاحیت افراد کو نظرانداز کیا جارہا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ اس پروگرام میں اصلاح اور ہمارے پیشہ ور افراد کے ساتھ انصاف ضروری ہے تب تک موجودہ موقف ہمارے لئے قابل قبول نہیں ۔

TOPPOPULARRECENT