ہندو تنظیموں کے ذریعہ اغوا کی گئی مہک پرمحکمہ پولیس خاموش ، میڈیا کے دباؤ کے بعد قصورواروں کے خلاف مقدمہ درج 

رامپور : رامپور کا ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہورہی ہے ۔ ویڈیو میں ندیم نامی ایک شخص ٹوپی پہنے اپنی ماں اور بہن کے ساتھ مل کر الزام لگارہا ہے کہ اس کی نا بالغ بہن کو ہندو تنظیموں نے اغوا کرلیا ہے اور پولیس ان کی مدد نہیں کررہی ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے ندیم نے کہا کہ اس کی چھوٹی بہن مہک شہر میں کام سیکھنے آتی تھی ۔ وہاں اس کی ملاقا ت منوج سکسینہ او رسچن شرما نامی دو لوگوں سے ہوئی ۔

ان دونوں اسے سرکاری نوکری دلانے کا وعدہ کئے تھے ۔ اسی سلسلہ میں وہ دونوں مہک کو لے کر چلے گئے ۔جب مہک گھر نہیں پہنچی تو ہم نے اس کی تلاش شروع کردی ۔ اسی اثناء ہمیں پتہ چلا کہ مہک کا نام بدل کر آریہ اگر وال کردیا گیا ہے ۔ ہم بہت پریشان ہیں ۔ پولیس بھی ہماری مدد نہیں کررہی ہے ۔اسکول کے اسنادات پر مہک کی تاریخ پیدائش ۵؍ اپریل ۲۰۰۴ ء ہے ۔ ندیم نے مزید بتایا کہ میڈیا کے ذریعہ اس معاملہ پر سختی کرنے پر پولیس نے ایک رپورٹ درج کیا ہے ۔

دفعہ 363,366,506,IPC POCSOایکٹ کے تحت منوج سکسینہ سمیت ۳؍ افراد کے نام کی رپورٹ درج کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT