Sunday , December 17 2017
Home / ہندوستان / ہندو راشٹر قائم کرنے کیلئے تاریخی حقائق مسخ اور نفرت انگیز مہم

ہندو راشٹر قائم کرنے کیلئے تاریخی حقائق مسخ اور نفرت انگیز مہم

سیکولر اقدار کو فروغ دینے مؤرخین کو این سی پی کے سربراہ شردپوار کا مشورہ
ممبئی ۔ /5 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) نیشنلسٹ کانگریس پارٹی ( این سی پی) کے سربراہ شردپوار نے آج یہ الزام عائد کیا کہ اسکول کے تعلیمی نصاب میں تاریخ کو مسخ کرتے ہوئے ہندوستان کو ہندوراشٹرا بنانے کی منظم کوشش کی جارہی ہے اور مورخین پر زور دیا کہ نئی نسل کو حقائق سے واقف کروانے کیلئے متحد ہوجائیں ۔ وائی بی چوہان میموریل لکچر کے موقعہ پر مخاطب کرتے ہوئے شردپوار نے کہا کہ بعض لوگ  تعلیمی نصاب میں تاریخ کو مسخ کرتے ہوئے ہندوستان کو ہندو راشٹرا میں تبدیل کرنے کے مقصدسے کام کررہے ہیں ۔ جس کے باعث ملک کے سیکولر تانے جانے کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں میں یہ شعور بیدار کرنے کی ضرورت ہے کہ بعض لوگ سماج میں نفرت کا زہرپھیلاکر ذہنوں کو پراگندہ کرنے کی کوشش میں ہیں ۔ اس مسئلہ پر مضامین  تحریر کئے جائیں اور مباحث کروائے جائیں کیونکہ ایک سنگین معاملہ بن گیا ۔ این سی پی لیڈر نے کہا کہ بعض لوگ یہ گمراہ کن اطلاعات پھیلا رہے ہے کہ شیواجی مہاراج ، مسلم دشمن تھی جبکہ حقیقت یہ تھی کہ شیواجی کی فوج میں مسلمانوں کواہم عہدوں پر فائز کیا گیا تھا ۔

اس طرح کی گمراہ کن اور نفرت انگیز اطلاعات سیکولرازم اور قومی یکجہتی کے حق میں بہتر ثابت نہیں ہوگی اور موجودہ ماحول کا مقابلہ کرنے کیلئے مورخین کو یکجا ہوجانا چاہئیے اور وقتاً فوقتاً ملاقاتیں کرتے ہوئے حق بیانی پیش کریں ۔ تاکہ عوام کو اصل تاریخ سے آگاہ کیا جاسکے ۔ مسٹر شردپوار نے کہا کہ اگرچہ بدقماش عناصر اپنی گھناؤنی سازش میں کامیاب ہوگئے تو ہم نئی نسل کو کیا سکھائیں گے اور مسخ شدہ تاریخ کو درست اور صحیح کرنے کیلئے منظم طریقہ کار یا ایک ادارہ قائم کیا جائے ۔ انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ حق گوئی پیش کرنے والوں کو ممکنہ اعانت کیلئے تیار ہیں ۔ سابق مرکزی وزیر نے کہا کہ 20 بڑے تحقیقاتی اداروں نہرو سائنس سنٹر اور وائی بی چوہان سنٹر کے ٹرسٹی ہیں اور مورخین یہاں کی سہولیات سے استفادہ کرسکتے ہیں اور سیکولر اقدار پر مشتمل تصانیف کی اشاعت اور تقسیم کی ذمہ داری ادا کرسکتے ہیں تاکہ فرقہ پرست طاقتوں کے عزائم کو ناکام بنایا جاسکے ۔ مسٹر شردپوار نے کہا کہ وائی بی چوہان سنٹر میں ایک علحدہ شعبہ تاریخ قائم کیا جائے گا ۔ جہاں پر مورخین سمینارس اور مذاکرے منعقد کرسکتے ہیں ۔

چھوٹا راجن کیس میں سابق پاسپورٹ آفیسرس
کی عدالت میں طلبی
نئی دہلی 5 فروری (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کی ایک عدالت نے 3 ریٹائرڈ پبلک سرونٹس (سبکدوش سرکاری عہدیداروں) کو جن کے خلاف جعلی پاسپورٹ کیس میں انڈر ورلڈ ڈان چھوٹا راجن کے ساتھ چارج شیٹ پیش کیا گیا۔ یکم مارچ کو طلب کیا ہے۔ سی بی آئی کے خصوصی جج ونود کمار نے مذکورہ کیس میں سی بی آئی کی چارج شیٹ کا جائزہ لینے کے بعد 3 ملزمین کو سمن جاری کیا اور بتایا کہ چونکہ سرکاری عہدیداروں، وظیفہ پر سبکدوش ہوگئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT