Tuesday , November 21 2017
Home / جرائم و حادثات / ہندو لڑکے سے انٹرنیٹ پر معاشقہ، مسلم لڑکی کی زندگی تباہ

ہندو لڑکے سے انٹرنیٹ پر معاشقہ، مسلم لڑکی کی زندگی تباہ

حیدرآباد ۔ 6 ۔ فروری : ( سیاست نیوز ) : انٹرنیٹ سہولیات کے بے جا استعمال سے ایک مسلم لڑکی کی تباہی کا افسوس ناک واقعہ پیش آیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ ٹولی چوکی علاقہ کی ساکن مسلم لڑکی ایک نوجوان کے ہاتھوں تباہ ہوگئی ۔ ندیم کالونی کی اس لڑکی کی پہچان انٹرنیٹ چیاٹنگ کے ذریعہ فرینڈس کالونی کے ساکن وشنووردھن سے ہوئی اس شخص کی عمر 28 سال بتائی گئی ہے ۔ جب کہ لڑکی 32 سال کی ہے ۔ دونوں ہی پیشہ سے سافٹ ویر ملازم ہیں ۔ اور اعلیٰ تعلیم یافتہ بتائے گئے ہیں ۔ انسپکٹر گولکنڈہ مسٹر خلیل پاشاہ کے مطابق ان دونوں کی پہچان ڈیٹنگ فرینڈ شپ کے ذریعہ ہوئی اور گذشتہ 6 ماہ سے ان کی دوستی جارہی تھی ۔ ان کی دوستی جو انٹر نیٹ سے شروع ہوئی تھی دونوں کے درمیان معشوقہ میں تبدیل ہوگئی اور چیاٹنگ میں ناقابل بیان باتیں بھی ہوا کرتی تھیں ۔ 2 فروری کے دن وشنووردھن نے ندیم کالونی کی ساکن اس لڑکی سے ملاقات کی اور اسے چائے پینے کے بہانے ساتھ لے کر گیا ۔ راستہ میں لڑکی کوگھر چلنے کی ترغیب دیتے ہوئے کہا کہ اس کے پاس بہترین تعلیمی مواد ہے جو لڑکی کے یو ایس میں اعلیٰ تعلیم کے لیے کارآمد ثابت ہوسکتا ہے ۔ اس پر لڑکی اس کے مکان چلے گئی ۔ جہاں اس نے لڑکی کے بھروسہ کو توڑتے ہوئے کولڈرنک میں شراب ( وائن ) ملا دی لڑکی نے کولڈرنک تصور کرتے ہوئے شراب کا استعمال کرلیا اور وہ ہوش کھو بیٹھی لڑکی کی مدہوشی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے وشنووردھن نے لڑکی کی مبینہ عصمت ریزی کی ۔ ہوش میں آنے کے بعد لڑکی نے خوف و ہراساس کے ماحول میں اپنے مکان کا رخ کیا اور پولیس گولکنڈہ میں شکایت درج کروائی گئی ۔ پولیس نے تحقیقات کے بعد وشنووردھن کو گرفتار کرتے ہوئے نربھئے و دیگر سنگین دفعات کے تحت کارروائی کرتے ہوئے جیل منتقل کردیا ۔ یہ بات انسپکٹر گولکنڈہ خلیل پاشاہ نے بتائی ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT