Sunday , July 22 2018
Home / Top Stories / ہند۔اسرائیل دوستی آسمانوں پر طئے شدہ رشتہ

ہند۔اسرائیل دوستی آسمانوں پر طئے شدہ رشتہ

وزیراعظم اسرائیل نیتن یاہو کی ناشتہ پر ممبئی کے صف اول کے تاجروں سے ملاقات ‘ برقی توانائی پر تبادلہ خیال
ممبئی ۔ 18جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم اسرائیل بنجامن نیتن یاہو نے آج ہندوستان کے ساتھ شراکت داری کو ’’ آسمانوں پر طئے شدہ رشتہ ‘‘ قرار دیا جو انسانیت ‘ جمہوریت اور آزادی کی مشترکہ اقدار سے محبت پر مبنی ہے ۔ ہند۔ اسرائیل بزنس چوٹی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نیتن یاہو نے گہری شخصی دوستی کا تذکرہ کیا جو وزیراعظم ہند نریندر مودی کے ساتھ ہے اور کہا کہ یہ گرمجوشی مزید گہری ہوتی جارہی ہے اور عام آدمی تک پہنچ رہی ہے ۔ اپنے چار روزہ دورہ ہند کی آخری منزل پر جسے انہوں نے غیر معمولی قرار دیا اور کہا کہ ہندوستان کیلئے گہرا اور پابند کردینے والا احترام اُن کے دل میں ہے ۔ ہندوستانی عوام اور اس کے تمدن کا وہ احترام کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم کرہ ارض کے دو قدیم ترین تمدن ہیں ‘ جمہوریتیں ہیں ‘ ہم آزادی سے مشترکہ طور پر محبت کرتے ہیں ‘ ہماری انسانیت سے محبت آسمانوں پر طئے شدہ رشتہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم درحقیقت سچے شراکت دار ہیں ۔ نیتن یاہو نے ہندوستانی تاجر طبقہ کو اسرائیل کا دورہ کرنے کی دعوت دی ۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح انہوں نے اسرائیل کا منظر تبدیل کردیا ہے جب کہ انہیں پریشان حال معیشت ورثہ میں ملی تھی ‘ کئی شعبے ابتر حالت میں تھے اور و زیراعظم ہندوستان نریندر مودی جس انداز میں کام کررہے ہیں یہ یکساں نوعیت کے ہیں ۔ جب میں نے وزیراعظم مودی سے بات چیت کی تو میں نے دیکھا کہ وہ وہی کچھ کررہے ہیں ’’ جو میں کرچکا ہوں ‘‘ ۔ اب انہیں یہ مہم درپیش ہے ‘ وہ ایجادات کی اہمیت سمجھتے ہیں اور انہیں سادہ بناتے ہیں ۔ وزیراعظم اسرائیل نے کہا کہ سب سے زیادہ قواعد کی موجودگی ’’ مسابقت کو محدود ‘‘ کردیتی ہے اور خانگی صنعت کے شعبہ کو با اختیار بنانا فوری ترقی کی کلید ہے ۔ نیتن یاہو نے کہا کہ انہوں نے یہ اقدامات قبل ازیں کئے ہیں ۔ خانگی شعبہ معیشت کو زبردست بناتا ہے اور یہی واحد طریقہ کار ہے جس کے ذریعہ کمتر ‘ سادہ تر اور آسان ٹیکس اندازی کے ذریعہ پسماندہ طبقہ کو ترقی یافتہ بنایا جاسکے ۔ نیتن یاہو نے اپنے انتظامی اقدامات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ ان کے ذریعہ اسرائیل عالمی بینک کی مسابقتی فہرست میں 15ویں مقام سے 12مقامات اوپر پہنچ گیا ہے ۔ امریکہ ‘ سنگاپور اور سوئٹزرلینڈ جیسے ملک اسرائیل کے موقف سے سہمے ہوئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس موقف کیلئے نیندگنوانی پڑتی ہے ۔ شام جیسے ممالک اب اسی مرحلہ میں ہے ۔ نیتن یاہو نے کہا کہ ان کے ملک کا مقصد مسابقت کے اعتبار سے عالمی سطح پر سرفہرست 10ممالک کی فہرست میں شامل ہونا ہے ۔ نیتن یاہو نے کہا کہ وہ دوسروں کی نظروں سے ماورا ہونا چاہتے ہیں اور اسرائیل اس میں کبھی ناکام نہیں ہوگا ۔ نیتن یاہو نے دعویٰ کیا کہ ایجادات کی اہمیت ہے ‘ کسی بھی موضوع پر ناشتہ کی میز پر منعقدہ چوٹی کانفرنس میں بات چیت کی جاسکتی ہے ۔ اس اجلاس میں ہندوستانی کمپنیوں کے منتخبہ چیف ایگزیکٹیو شریک تھے ۔ انہوں نے کہا کہ بلارکاوٹ ایجادات کیلئے کاروبار کی اہمیت ہے ۔ اسرائیلیوں کے ہندوستانیوں کے ساتھ تعاون کے ذریعہ کیلیفورنیا میں سلیکان ویلی قائم ہوئی جو ایجادات کا مرکز ہے ۔ نیتن یاہو نے کہا کہ ہمیں ہندوستانیوں اور اسرائیلیوں کی صلاحیتوں کو یکجا کرنا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT