Monday , October 22 2018
Home / دنیا / ہند۔امریکہ تعاون کو باہمی تعلقات سے آگے بڑھانے پر زور

ہند۔امریکہ تعاون کو باہمی تعلقات سے آگے بڑھانے پر زور

امریکہ اور دنیا کی امیدوں پر پورا اترنے کا عہد، ٹرمپ سے مودی کی بات چیت
منیلا ۔ 13 ۔ نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج امریکہ کے صدر ڈونانڈ ٹرمپ سے کہا کہ ہندوستان اور امریکہ کے تعلقات باہمی مفادات سے کہیں زیادہ پیشرفت کرچکے ہیں جو ایشیاء اور بالعموم ساری انسانیت کیلئے فائدہ مند ثابت ہوں گے ۔ صدر ٹرمپ نے وزیراعظم مودی کو اپنا ایک ایسا دوست قرار دیا جو وزیراعظم خدمت انجام دے رہے ہیں ۔ آسیان چوٹی کانفرنس میں پنی باہمی ملاقات سے قبل مودی نے یہ تصرے کئے ۔ دونوں قائدین نے اپنی بات چیت کے دوران دفاع اور سلامتی کے بشمول مختلف امور و مسائل پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ مودی نے کہا کہ ’’ہندوستان اور امریکہ کے مابین تعلقات کو مسلسل فروغ حاصل ہورہا ہے اور میں یہ ہی محسوس کرتا ہوں کہ ہندوستان اور امریکہ کے درمیان تعلقات محض باہمی مفادات تک محدود نہ یں ہیں۔ ہم مشترکہ طور پر اپنے مفادات ایشیاء اور دنیا بھر میں ساری انسانیت کیلئے مستقبل کیلئے کام کر رہے ہے ں۔ مودی نے ٹرمپ سے ان کے دورہ ایشیاء کے موقع پر جہاں کہیں بھی بات چیت کا موقع ملنے پر ہندوستان کی ستائش کئے جانے پر ان کا شکریہ ادا کیا ۔ مودی نے کہا کہ حالیہ چند دن کے دوران ٹرمپ نے جہاں بھی دورہ کیا اور جب کبھی ہندوستان کے عہدے میں بات کرنے کا موقع ملا ، انہوں نے ہندوستان کے بارے میں اعلیٰ ترین نظریات کا اظہار کیا ‘‘۔ مودی نے کہا کہ ’’میں آپ کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ ہندوستان سے دنیا اور امریکہ نے جو بھی توقعات وابستہ کئے ہیں ہندوستان ہمیشہ ہی ان کی تکمیل کی کوشش کرتا رہا ہے اور ہم مستقبل میں بھی ایسا ہی کرتے رہیں گے ‘‘۔ ٹرمپ نے مودی کو اپنا ا یک بہترین دوست اور ایک انت ہائی شریف ا لنفس شخص قرار دیا ۔ ٹ رمپ نے کہا کہ ’’وزیراعظم مودی یہاں ہیں، ہم پہلے وہائیٹ ہاؤز میں ملاقات کرچکے ہیں ۔ وہ ہمارے دوست بن گئے ہے ں۔ وہ ا یک اہم خدمت انجام دے رہے ہیں۔ کئی مسائل ححل کئے گئے ہیں اور ہم دونوں مل کر کام کرتے رہیں گے ‘‘۔ انہوںنے مزید کہا کہ ’’جو کچھ میں نے سنا ہے کہ مودی ہندوستان میں مختلف طبقات اور گروپوں کو متحد کرتے ہوئے ایک عظیم خدمت انجام دے رہے ہیں اور یہ ایک اچھی خبر ہے اور ہندوستان سے دیگر کئی اچھی خبریں آرہی ہیں‘‘۔ باور کیا جاتا ہے کہ باہمی تجارت کو فروغ ینے کے بشمول مفادات کے مختلف امور و مسائل کے حدود میں تازہ ترین صورتحال پر بھی دونوں قائدین نے تفصلی تبادلہ خیال کیا ۔ جنوبی چین میں شدت کے تناظر میں چہار فریقی اتحاد کی تشکیل کا نظریہ بھی منظر عام پر آیا ہے ۔ حکمت عملی کی اہ میت کے حامل ہند۔ بحرالکاہل کے علاقہ میں امریکہ نے ہندوستان کے وسیع تر رول کی حمایت کی ہے ۔ سمجھا جاتا ہے کہ اس علاقہ میں تیزی سے ابھرنے والے چین پر لگام کسنے کیلئے ا مریکہ ، جاپان ، آسٹریلیا اور ہندوستان کے مابین حکمت عملی کے چہار فریقی اتحاد کے احیاء پر غور کیا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT