Friday , November 24 2017
Home / ہندوستان / ہند۔ پاک قومی سلامتی مشیر مذاکرات کی منسوخی کا مطالبہ

ہند۔ پاک قومی سلامتی مشیر مذاکرات کی منسوخی کا مطالبہ

پڑوسی ملک کے ساتھ کسی طرح کی بات چیت نہ کی جائے : شیوسینا

نئی دہلی ۔ 6 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اودھم پور حملے کے تناظر میں ہندوستان اور پاکستان کے قومی سلامتی مشیر کی بات چیت کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ لوک سبھا میں آج شیوسینا رکن چندرکانت کھیرے نے وقفہ صفر کے دوران یہ مسئلہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ کسی طرح کے مذاکرات نہیں ہونے چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ قومی سلامتی مشیر کی سطح پر مجوزہ ملاقات منسوخ کی جانی چاہئے۔ یہ مذاکرات 23 اور 24 اگست کو منعقد شدنی ہے۔ کھیرے نے وزیرداخلہ سے یہ بھی مطالبہ کیا کہ پڑوسی ملک کے ساتھ کسی طرح کے باہمی مذاکرات نہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کو دہشت گرد بھیجنے کا سلسلہ روکنے اور تحقیقات میں مدد تک یہ مذاکرات نہیں ہونے چاہئے۔ انہوں نے یہ بیان ایسے وقت دیا جبکہ ایک دن قبل اودھم پور میں بی ایس ایف قافلہ پر حملہ کیا گیا تھا جس میں دو بی ایس ایف جوان ہلاک ہوگئے۔

ایک دہشت گرد بھی ہلاک ہوا اور دوسرے کو زندہ پکڑ لیا گیا۔ کھیرے نے سابق ڈائرکٹر جنرل پاکستان فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی طارق کھوسا کا بھی حوالہ دیا جنہوں نے پاکستان میں 26/11 ممبئی حملہ کی تحقیقات کی تھی۔ بی جے پی ارکان نیپال سنگھ، ستیہ پال سنگھ، جگدمبیکا پال اور بھولا سنگھ نے نیشکر کسانوں کے مسائل اٹھائے۔ ایک اور بی جے پی رکن مہیندر ناتھ پانڈے نے ملک میں تیزی سے بڑھ رہے خانگی نرسنگ ہومس کا مسئلہ اٹھایا اور کہا کہ اس طرح کے ہاسپٹلس کو باقاعدہ بنانے کیلئے ریگولیٹری اتھاریٹی ہونی چاہئے۔ علاج کی شرحوں میں بھی یکسانیت ہونی چاہئے۔ انہوں نے حکومت سے اس مسئلہ کا جائزہ لیتے ہوئے پالیسی وضع کرنے کا مطالبہ کیا۔

 

حادثات میں سالانہ 1.5 لاکھ اموات
نئی دہلی ۔ 6 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ملک میں ہر سال اوسطاً 5 لاکھ سڑک حادثات میں تقریباً 1.5 لاکھ افراد ہلاک ہوتے ہیں ۔ منسٹر آف اسٹیٹ روڈ ٹرانسپورٹ اینڈ ہائی ویز رادھا کرشنن نے آج لوک سبھا کو بتایا کہ تقریباً 78 فیصد حادثات ڈرائیورس کی غلطی کے سبب ہوتے ہیں اور ڈرائیورس کو مؤثر ٹریننگ یقینی بنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ان حادثات میں زخمی ہونے والوں کی تعداد اوسطاً 4 لاکھ سے زائد ہے۔

TOPPOPULARRECENT