Wednesday , December 19 2018

ہند۔ چین تعلقات کے فروغ میں ذرائع ابلاغ کا کردار اُجاگر

بیجنگ۔ یکم؍فروری (سیاست ڈاٹ کام)۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے آج ہند۔ چین تعلقات کے فروغ میں ذرائع ابلاغ کے کردار کو خاص طور پر دونوں دیوقامت ایشیائی ممالک کے درمیان تعلقات کے اُبھرتے ہوئے مثبت پہلوؤں کو اُجاگر کیا۔ سشما سوراج کے دورۂ چین کا ذرائع ابلاغ کے فورم سے خطاب کے ذریعہ آغاز ہوا۔ ان کے ساتھ وزیر اطلاعات چین جیانگ جیانگاؤ

بیجنگ۔ یکم؍فروری (سیاست ڈاٹ کام)۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے آج ہند۔ چین تعلقات کے فروغ میں ذرائع ابلاغ کے کردار کو خاص طور پر دونوں دیوقامت ایشیائی ممالک کے درمیان تعلقات کے اُبھرتے ہوئے مثبت پہلوؤں کو اُجاگر کیا۔ سشما سوراج کے دورۂ چین کا ذرائع ابلاغ کے فورم سے خطاب کے ذریعہ آغاز ہوا۔ ان کے ساتھ وزیر اطلاعات چین جیانگ جیانگاؤ بھی موجود تھے۔ سشما سوراج نے ایک دوسرے کے مفادات اور نقاط نظر کو فروغ دینے میں ذرائع ابلاغ کے کردار کا تذکرہ کیا۔ انھوں نے کہا کہ ایسا اس لئے بھی زیادہ ہے، کیونکہ ہر ملک اپنے قومی خصوصیات رکھتا ہے۔ انھوں نے واضح طور پر ہندوستانی ذرائع ابلاغ کے وسیع پیمانے پر آزاد ہونے کا حوالہ دیا، بہ نسبت سرکاری زیر انتظام ذرائع ابلاغ کے جو چین میں سرگرم ہے۔ سشما سوراج نے قدیم محققین جیسے چین کے ژوان زانگ اور ہندوستان کے کمارا جیوا کے تعلقات کی بہتری میں کردار کا حوالہ دیا۔

انھوں نے کہا کہ ہمارے لئے ژوان زانگ کے جذبہ کا احیاء چینی محققین اور صحافیوں میں اور کمارا جیوا کا جذبہ ہندوستانی محققین اور صحافیوں میں احیاء کرنے کی ضرورت ہے۔ انھوں نے تجویز پیش کی کہ دونوں ممالک کے ذرائع ابلاغ نشوونما پاتی ہوئی ہندوستانی
اور چینی معیشت اور تجارتی تعلقات کی زیادہ خبریں دیں۔ ذرائع ابلاغ کی تنظیموں نے جن کا تعلق دونوں ممالک سے ہے، باہمی ترسیل اور تعاون کے نئے ذرائع اختیار کرنا چاہئے جیسے کہ صحافیوں، مضامین، کہانیوں کے مرکزی موضوعات کے علاوہ مشترکہ انٹرویوز شائع کئے جائیں۔ انھوں نے کہا کہ ہم نے باہمی تبادلوں کا نظام جیسے دفاعی،

معاشی اور مالیاتی مذاکرات کے ذریعہ قائم کردیئے ہیں۔ ہمارا عملی تعاون مزید شعبوں میں توسیع پارہا ہے۔ یہ تمام ذرائع ابلاغ کی کوششوں کا اٹوٹ حصہ ہیں۔ انھوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے صحافی مختلف مسائل پر جن کا تعلق دونوں ممالک سے ہے۔ دونوں ممالک کے صحافیوں نے باہمی مختلف مسائل پر تبادلۂ خیال کرکے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات بہتر بنانے کے ذرائع تلاش کئے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی جاریہ سال مئی میں چین کا دورہ کریں گے۔ چینی وزیر خارجہ وانگ ای سے ملاقات سے قبل انھوں نے ہندوستانی برادری سے خطاب کرتے ہوئے اس انکشاف کیا۔ انھوں نے کہا کہ یہ ان کا اولین دورۂ چین ہے جس میں وہ کیلاش مان سروور یاترا پر توجہ مرکوز کریں گی۔

TOPPOPULARRECENT