Thursday , January 18 2018
Home / کھیل کی خبریں / ہیوز زندگی کی لڑائی میں مصروف ، حالت ہنوز تشویشناک

ہیوز زندگی کی لڑائی میں مصروف ، حالت ہنوز تشویشناک

سڈنی۔ 26 نومبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام)آسٹریلیائی بیٹسمین فل ہیوز زندگی کی لڑائی لڑ رہے ہیں جیسا کہ سڈنی کرکٹ گراؤنڈ پر شیفیلڈ شیلڈ مقابلے کے دوران گیند ان کے سر کے نچلے حصہ پر لگی تھی اور وہ میدان پر گر پڑے تھے جس کے فوراً بعد انھیں دواخانہ منتقل کیاگیا تھا ، نیز ہنگامی حالات میں ان کی سرجری بھی کی گئی ہے ۔ سینٹ ونسنٹ دواخانہ کے آئی سی یو می

سڈنی۔ 26 نومبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام)آسٹریلیائی بیٹسمین فل ہیوز زندگی کی لڑائی لڑ رہے ہیں جیسا کہ سڈنی کرکٹ گراؤنڈ پر شیفیلڈ شیلڈ مقابلے کے دوران گیند ان کے سر کے نچلے حصہ پر لگی تھی اور وہ میدان پر گر پڑے تھے جس کے فوراً بعد انھیں دواخانہ منتقل کیاگیا تھا ، نیز ہنگامی حالات میں ان کی سرجری بھی کی گئی ہے ۔ سینٹ ونسنٹ دواخانہ کے آئی سی یو میں ہیوز کا علاج جاری ہے لیکن 25 سالہ بیٹسمین جوکہ سیان ابوٹ کا باؤنسر کھیلنے کی کوشش میں زخمی ہوئے تھے ، ان کی حالت ہنوز تشویشناک بتائی گئی ہے ۔ آسٹریلیائی ٹیم کے ڈاکٹر پیٹر بروکنرنے دواخانہ کے باہر میڈیا نمائندوں سے اظہار خیال کرتے ہوئے ہیوز کے حالات کی تفصیلات فراہم کی ہیں ۔ ٹیم کے ڈاکٹر کے بموجب ہیوز کی حالت میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ہے

اور وہ ہنوز تشویشناک صورتحال سے گذر رہے ہیں لیکن جیسے ہی ان کی حالات میں کوئی تبدیلی واقع ہوگی تو میڈیا کو مطلع کیا جائے گا۔ کرکٹ آسٹریلیا کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ہیوز کی حالت ہنوز تشویشناک ہے اور وہ سینٹ ونسنٹ ہاسپٹل کے آئی سی یو میں زیرعلاج ہیں ، جیسا کہ انھیں ساؤتھ آسٹریلیا کی نمائندگی کرتے ہوئے نیو ساؤتھ ویلس کے خلاف منعقدہ مقابلے کے دوران زخمی ہونے پر یہاں منتقل کیا گیا ہے ۔ بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ہیوز کے اسکانس کئے جارہے ہیں اور جیسے ہی کوئی خبر رپورٹس کے ذریعہ معلوم ہوگی تو اسے میڈیا کو بھی فراہم کیا جائے گا ۔ دریں اثناء کرکٹ آسٹریلیا نے شیفیلڈ شیلڈ کے تمام مقابلے منسوخ کردیئے ہیں جو دراصل ہیوز کیلئے کرکٹ آسٹریلیا کی جانب سے کی جانے والی نیک تمناؤں کا ایک حصہ ہے ۔

ہیوز مذکورہ ٹورنمنٹ کے ابتدائی دن نیو ساؤتھ ویلس اور ساؤتھ آسٹریلیا کے درمیان کھیلے گئے مقابلے کے دوران زخمی ہوئے تھے اور انھیں دواخانہ منتقل کرنے کے ساتھ ہی اُس مقابلے کو بھی منسوخ کردیا گیا تھا ۔ کرکٹ آسٹریلیا کے ایکزیکٹیو جنرل منیجر پیاٹ ہاورڈ نے کہا ہے کہ ہم نے کھلاڑیوں سے اظہارخیال بھی کیا ہے لیکن ملک کے تمام علاقوں سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں نے کہا ہے کہ یہ کرکٹ کھیلنے کیلئے صحیح وقت نہیں ہے کیونکہ ہیوز شدید زخمی ہیں اور اس حادثہ کا دیگر کھلاڑیوں پر بھی صدمہ موجود ہے ۔میچ ریفریز اور تمام کھلاڑیوں نے اس مشکل وقت میں ہیوز کا ساتھ دینے کے علاوہ ٹورنمنٹ کے مقابلوں کو منسوخ کرنے کی حمایت کی ہے ۔ نیز اس حادثہ کی وجہ سے کھلاڑیوں پر سکتہ طاری ہے

لہذا انھیں اس غم سے باہر نکالنے کیلئے ان کی کونسلنگ بھی کی جارہی ہے ۔ ہاورڈ نے مزید کہا ہے کہ زخمی بیٹسمین ہیوز کو بہترین اور ہر ممکنہ طبی امداد فراہم کی جارہی ہے نیز افراد خاندان کے علاوہ دنیا بھر کے کرکٹ شائقین کی نیک تمنائیں ان کے ساتھ ہے اور اُمید ہے کہ وہ جلد صحتیاب ہوجائیں گے ۔ دریں اثناء ہیوز کے زخمی ہونے پر یہ سوال اُٹھایا جارہا ہے کہ کھلاڑیوں کو فراہم کی جانے والی حفاظت اور آلات کا معیار کیا ہے جس پر ہیوز کیلئے ہیلمٹ بنانے والی کمپنی مسوری نے کہا ہے کہ حادثہ کے وقت ہیوز نے پرانے اور وزن میں ہلکے قسم کا ہیلمٹ استعمال کیا تھا ۔ برطانیہ سے تعلق رکھنے والی کمپنی کے ترجمان نے کہا ہے کہ ہیوز نے پرانا ہیلمٹ پہنا ہوا تھا ، حالانکہ کمپنی نے نئے طرز کے ہیلمٹ فراہم کررکھے ہیں جوکہ حفاظتی اعتبار سے بہتر ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT