Monday , November 20 2017
Home / دنیا / یاسر عرفات کو زہر دیے جانے کی تحقیقات اختتام پذیر

یاسر عرفات کو زہر دیے جانے کی تحقیقات اختتام پذیر

پیرس3 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) فرانس میں فلسطینی رہنما یاسر عرفات کے قتل کی تحقیقات ختم کر دی گئی ہیں۔ یہ تحقیقات یاسرعرفات کو مبینہ طور پر زہردیے جانے کے دعووں کے بعد شروع کی گئی تھیں۔ 75 سالہ فلسطینی رہنما یاسر عرفات کا انتقال 2004 ء میں فرانس کے شہر پیرس میں ہوا تھا جس کے بعد ان کی اہلیہ کا کہنا تھا کہ انھیں مبینہ طور پر تابکار مادے ‘پلونیم’ کے ذریعے مارا گیا ہے۔ سوئٹزرلینڈ کی ایک لیبارٹری میں ہونے والے ایک تجزیے نے بھی بظاہر اس دعوے کی تصدیق کی تھی۔ تاہم پیرس کے نزدیک واقع نانتیخ میں استغاثہ کے مطابق تحقیقات کے دوران تابکار مادہ پلونیم ‘نہیں پایا گیا، لہذا مزید تحقیقات نہیں کی جائیں گی۔ خون میں خرابی کے باعث بیمار ہونے والے یاسر عرفات 8 نومبر 2004 ء کو جان لیوا دورے کے باعث انتقال کرگئے تھے۔ اس وقت ان کا پوسٹ مارٹم نہیں کروایا گیا تھا کیونکہ ان کی اہلیہ سوہا کی جانب سے پوسٹ مارٹم کروانے کا مطالبہ سامنے نہیں آیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT