Sunday , April 22 2018
Home / Top Stories / یاسر عرفات کی یاد میں غزہ میں ہزاروں فلسطینیوں کا اجتماع

یاسر عرفات کی یاد میں غزہ میں ہزاروں فلسطینیوں کا اجتماع

غزہ سٹی 11 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ہزاروں کی تعداد میں فلسطینیوں نے غزہ میں جمع ہوتے ہوئے آج اپنے مرحوم رہنما یاسر عرفات کی یاد تازہ کی ۔ 2007 کے بعد سے حماس کے کنٹرول والے علاقہ میں اس طرح کا یہ پہلا اجتماع تھا ۔ اس مظاہرہ کو حماس اور فتح گروپ کے مابین گذشتہ مہینے ہوئی معاہدہ کے بعد قومی اتحاد کے مظاہرہ کے طور پر پیش کیا جا رہا ہے ۔ فتح گروپ کی قیادت 2004 میں اپنے انتقال تک یاسر عرفات کرتے تھے ۔ یہ معاہدہ دونوں متحارب گروپس کے مابین کئی برسوں کی لڑائی اور خانہ جنگی کے بعد طئے پایا ہے ۔ اس معاہدہ کی رو سے حماس امکان ہے کہ غزہ کا سیول کنٹرول محمود عباس کی قیادت والے فتح گروپ کو یکم ڈسمبر تک حوالے کردے گی ۔ ساری غزہ پٹی سے ہزاروں کی تعداد میں لوگ غزہ سٹی میں آج صبح کی اولین ساعتوں ہی سے سرایا اسکوائر پر جمع ہونے شروع ہوگئے تھے ۔ فلسطینی عوام نے یہاں قومی پرچم تھامے ہوئے تھے اور ان کے ہاتھوں میں پلے کارڈز بھی تھے جن پر اتحاد کی اپیلیں درج تھیں۔ اس کے علاوہ یہاں پہونچنے والے عوام کے ہاتھوں میں یاسر عرفات اور محمود عباس کے پورٹریٹس بھی تھے ۔ یہاں جمع ہونے والوں میں سے ایک نوجوان شکری انتر نے کہا کہ آج کا دن وفاداری ‘ اتحاد اور مصالحت کا دن ہے ۔ ہم صدر فلسطین اور حکومت سے کہتے ہیں کہ فتح گروپ کے نوجوان غزہ میں ان کی مدد کے منتظر ہیں۔ ایک 50 سالہ خاتون رانیہ بربیک کے ہاتھ میں فتح کا پرچم اور محمود عباس کی تصویر تھی ۔ اس نے کہا کہ وہ اپنے فرزند کے ساتھ صبح سات بجے خان یونس میں اپنے گھر سے یہاں پہونچی ہے ۔ اس نے کہا کہ ہم ابو عمار ( یاسر عرفات ) کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس اجتماع کے ذریعہ ہم چاہتے ہیں کہ فتح اور حماس گروپ دشمن کے خلاف متحد ہوجائیں۔ حماس نے 2007 میں فتح گروپ کے ساتھ تصادم کے بعد غزہ کا کنٹرول حاصل کرلیا تھا ۔آج کے اجتماع کو دونوں گروپس نے اتحاد کا مظاہرہ قرار دیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT