Saturday , May 26 2018
Home / شہر کی خبریں / یروشلم کو اسرائیل کا صدر مقام بنانے امریکہ کے فیصلہ کی مذمت

یروشلم کو اسرائیل کا صدر مقام بنانے امریکہ کے فیصلہ کی مذمت

ٹرمپ عیسائیت کا علمبردار، صدر تعمیر ملت جناب جلیل احمد کا بیان
حیدرآباد 17 ڈسمبر (پریس نوٹ) جناب سید جلیل احمد صدر کل ہند مجلس تعمیر ملت نے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے اور امریکی سفارت خانہ وہاں منتقل کرنے کے تعلق سے صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ کے فیصلہ کو اسلام اور مسلم اُمت کے خلاف معاندانہ اقدام قرار دیا اور کہاکہ ڈونالڈ ٹرمپ کا یہ فیصلہ ان کی اس ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے جس کا انھوں نے خود کو دنیائے عیسائیت کا علمبردار قرار دیتے ہوئے کیا تھا۔ جناب جلیل احمد نے کہاکہ ڈونالڈ ٹرمپ نے عنان اقتدار سنبھالنے کے بعد سے ہی مسلمانوں کے خلاف مختلف اقدامات کا اعلان کیا جس سے ساری دنیا واقف ہے۔ ان اقدامات پر عالم اسلام میں بے چینی ضرور تھی لیکن اس کا اظہار نہیں ہورہا تھا لیکن جب انھوں نے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے کا اعلان کیا تو اس پر سارا عالم اسلام تڑپ اُٹھا اور اس کے خلاف صدائے احتجاج بلند کی جانے لگی۔ انھوں نے موجودہ حالات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہاکہ ٹرمپ کے فیصلہ کے خلاف اب عالم اسلام میں بیداری کی ایک نئی لہر آئی ہے۔ آرگنائزیشن آف اسلامک کوآپریشن نے بجا طور پر کہا ہے کہ مشرق وسطیٰ امن مساعی میں اب امریکہ کا رول قبول نہیں کیا جائے گا اور یہ کہ واشنگٹن اب قابل اعتبار نہیں رہا۔ انھوں نے توقع ظاہر کی کہ مسلم ممالک کا یہ اتحاد و اتفاق دیرپا ثابت ہوگا جس سے نہ صرف فلسطین کے مسئلہ کے حل میں مدد ملے گی بلکہ ساری دنیا میں مسلمانوں کے مفادات کے لئے بھی متحدہ کوششیں شروع ہوں گی۔ صدر تعمیر ملت نے مزید کہاکہ فلسطین کو تسلیم کرنے اور یروشلم کو اس کا صدر مقام بنانے کی بات کہی گئی ہے، ضرورت اس بات کی ہے کہ اس آواز کو تقویت عطا کی جائے اور فلسطینی عوام کو ان کا حق دلایا جائے۔

TOPPOPULARRECENT