Thursday , June 21 2018
Home / Top Stories / یمن میںفوج اور باغیوں میںجھڑپیں‘21افراد ہلاک

یمن میںفوج اور باغیوں میںجھڑپیں‘21افراد ہلاک

تائیز۔19اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) یمن کے باغیوں اور صدر کے حامی افواج کے درمیان جنوبی یمن میں رات بھر جھڑپیں جاری رہی جن میں 21افراد ہلاک ہوگئے ۔ شورش پسندوں کے خلاف سعودی زیر قیادت فضائی حملوں کی مہم کا آج چوتھا ہفتہ تھا ۔ طبی ارکان عملہ اور مقامی ذرائع کے بموجب 10باغی اور 4 عوامی کمیٹیوں کے نیم فوجی جنگجو صدر عبدالرب منصور ہادی کے ساتھ ج

تائیز۔19اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) یمن کے باغیوں اور صدر کے حامی افواج کے درمیان جنوبی یمن میں رات بھر جھڑپیں جاری رہی جن میں 21افراد ہلاک ہوگئے ۔ شورش پسندوں کے خلاف سعودی زیر قیادت فضائی حملوں کی مہم کا آج چوتھا ہفتہ تھا ۔ طبی ارکان عملہ اور مقامی ذرائع کے بموجب 10باغی اور 4 عوامی کمیٹیوں کے نیم فوجی جنگجو صدر عبدالرب منصور ہادی کے ساتھ جنگ کررہے تھے جن میں سے سحر سے پہلے ہونے والی جھڑپوں میں کم از کم 4افراد ہلاک ہوگئے ۔ یہ جھڑپ جنوبی مغربی شہر تائیز میںہوئی تھی ۔ عوامی کمیٹی فوج کی 35ویں بکتر بند برگیڈ کے ساتھ جنگ کررہی ہے اور جلاوطن صدر ہادی کی وفادار ہے ‘ انہیں سعودی زیرقیادت اتحادی افواج کے جنگی طیاروں کی فضائی مدد حاصل ہے ۔ جنہوں نے باغیوں کے مورچوں پر بمباری کی ہے ۔

عینی شاہدین کے بموجب باغیوں نے شہر ہدیدا اور عب سے تائیز کو مدد روانہ کی ہے ۔ یہ شہر گذشتہ ہفتہ خونریز جھڑپوں کا میدان جنگ بنا ہوا تھا ۔ بڑے پیمانے پر جنگ کے دوران جو یمن کے کئی صوبوں میں پھیلی ہوئی ہے ‘ یہ شہر بڑی حد تک محفوظ رہا تھا ۔باغیوں نے ستمبر میں کسی مخالفت کے بغیر صنعا پر قبضہ کرلیا تھا ۔ انہوں نے اپنے کنٹرول کو اب دیگر صوبوں تک توسیع دے دی ہے ۔ سعودی عرب نے جلاوطن صدر عبدالرب ہادی کی درخواست کو قبول کرتے ہوئے جنوبی شہر عدن میں مارچ میں انہیں پناہ دی تھی ۔ ہادی صنعا میں گذشتہ فبروری میں اپنی قیامگاہ پر نظربند کردیئے تھے لیکن وہ وہاں سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے اور بعد ازاں ساحلی شہر عدن میں نمودار ہوئے تھے ۔ انہوں نے عدن کو اپنا عارضی دارالحکومت قرار دیا تھا ۔ اس کے بعد وہ عدن سے فرار ہوکر ریاض پہنچ گئے اور وہ وہاں پناہ حاصل کرلی ۔ عدن میں جنوبی یمن کی جنگجوؤں کی کل رات باغیوں اور اتحاد فوج کے ساتھ جھڑپ ہوگئی جنہوں نے شہر کے بعض علاقوں پر قبضہ کرلیا تھا ۔ مقامی شہریوں کے بموجب ہلاکتوں کی تعداد معلوم نہ ہوسکی ۔ جنوبی یمن میں قبائلیوں نے 7باغی جنگجوؤں کو عتق میں اُن کے مورچہ پر حملہ کرتے ہوئے ہلاک کردیا ۔ یہ واقعہ صوبائی دارالحکومت شبوا میں پیش آیا ۔ قبائلیوں کے ذریعہ کے بموجب ساحلی شہر سعید میں امریکی ڈرون حملہ میں تین مشتبہ القاعدہ کے کارکن ہلاک ہوگئے ۔ مقامی قبائلی سردار نے کہا کہ عسکریت پسند ایک گاڑی میں ہتھیار منتقل کررہے تھے جب کہ اُن پر امریکی ڈرون حملہ ہوا ۔ امریکہ نے یمن کی القاعدہ شاخ برائے جزیرہ نما عرب کو جہادیوں کی تنظیم کا انتہائی خطرناک حلیف قرار دیا ہے ۔

دریں اثناء گرد کے طوفان کی وجہ سے شہری ہوابازی میں مدد دینے والے تمام آلات کو نقصان پہنچا اور زمینی کنٹرول سے ہدایات الجھن انگیز وصول ہونے کی وجہ سے طیاروں کے عملہ کو یمن کی فضائی حدود میں چیلنجوں کا سامنا کرنا پڑا ۔ ایئر انڈیا کاطیارہ یمن میں پھنسے ہوئے ہزاروں ہندوستانیوں کو بشمول غیر ملکی شہریوں کو بذریعہ طیارہ منتقل کرنے کیلئے یمن جارہا تھا ۔ اس کارروائی کی تفصیل بیان کرتے ہوئے ایئر انڈیا کے پائیلٹ نے جو ان کوششوں میں شامل تھا کہاکہ وہ تقریباً 2900افراد کا تین طیاروں 8پائیلٹس کی مدد سے تخلیہ کروانے میں کامیاب رہے ۔ صورتحال مزید سنگین ہوگئی جبکہ صنعا ایئرپورٹ پر لینڈنگ کا نظام غیرکارکرد ہوگیا جس کی وجہ سے پائیلٹس عملی اعتبار سے نابینا ہوگئے اور انہیں صرف جی پی ایس پر انحصار کرنا پڑا ۔

TOPPOPULARRECENT