Sunday , September 23 2018
Home / عرب دنیا / یمن میں امریکہ ، برطانیہ و فرانس کے سفارتخانے بند

یمن میں امریکہ ، برطانیہ و فرانس کے سفارتخانے بند

صنعا۔11 فبروری۔(سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے بعد برطانیہ اور فرانس نے بھی یمن میں اپنے سفارت خانے بند کردیئے ہیں، جس کی وجہ سکیورٹی خطرات بتائے گئے ہیں جو حوثی باغیوں کی طرف سے ملک پر کنٹرول حاصل کرنے کے بعد پیدا ہوئے ہیں۔ یمن میں امریکی سفارتی حکام اور واشنگٹن کے ایک عہدیدار نے بتایا ہے کہ واشنگٹن، یمنی دارالحکومت پر حوثی باغیوں کے قبض

صنعا۔11 فبروری۔(سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے بعد برطانیہ اور فرانس نے بھی یمن میں اپنے سفارت خانے بند کردیئے ہیں، جس کی وجہ سکیورٹی خطرات بتائے گئے ہیں جو حوثی باغیوں کی طرف سے ملک پر کنٹرول حاصل کرنے کے بعد پیدا ہوئے ہیں۔ یمن میں امریکی سفارتی حکام اور واشنگٹن کے ایک عہدیدار نے بتایا ہے کہ واشنگٹن، یمنی دارالحکومت پر حوثی باغیوں کے قبضے اور سکیورٹی کی مخدوش صورتحال کے باعث صنعاء میں اپنا سفارتخانہ بند کر رہا ہے۔صنعا میں موجود امریکی سفارتی حکام کا کہنا ہے کہ امریکی سفارتی مشن دستاویزات اور ہتھیاروں کو ضائع کر رہا ہے اور سفارتی عملہ پچھلے کچھ دنوں سے صنعا کو چھوڑ کر یمن سے جا رہا ہے۔امریکی سفیر نے سفارتی حکام کو بتایا تھا کہ واشنگٹن سفارتخانے کے بند ہو جانے کے بعد ترک یا الجزائری سفارتخانوں کو یمن میں امریکی مفادات میں نمائندگی کرنے کا کہہ سکتا ہے۔برطانیہ کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ یمنی دارالحکومت میں قائم اس کے سفارت خانے کے عملے کو وہاں سے نکال لیا گیا ہے جبکہ برطانوی سفیر بھی آج صبح یمن سے رخصت ہو گئے۔ فرانس کا سفارت خانہ جمعہ سے تاحکم ثانی بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔برطانیہ و فرانس نے اپنے مقامی اسٹاف کو دو ماہ کی چھٹی دے رکھی ہے۔

TOPPOPULARRECENT