Thursday , June 21 2018
Home / عرب دنیا / یمن میں 7 مشتبہ القاعدہ کارکن ہلاک

یمن میں 7 مشتبہ القاعدہ کارکن ہلاک

عدن 7 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) یمنی فوج نے آج القاعدہ کے 7 مشتبہ کارکنوں کو جنوب مشرقی صوبہ حضرموت میں ایک جھڑپ کے دوران گولی مار کر ہلاک کردیا۔ اِس جھڑپ میں 18 عسکریت پسند اور 10 فوجی ہلاک ہوئے۔ ایک سرکاری عہدیدار کے بموجب جھڑپ کا آغاز اُس وقت ہوا جب القاعدہ کے بندوق برداروں نے شہر سیون میں فوجی ہیڈکوارٹرس پر حملہ کیا۔ یہ شہر جہادیوں کا م

عدن 7 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) یمنی فوج نے آج القاعدہ کے 7 مشتبہ کارکنوں کو جنوب مشرقی صوبہ حضرموت میں ایک جھڑپ کے دوران گولی مار کر ہلاک کردیا۔ اِس جھڑپ میں 18 عسکریت پسند اور 10 فوجی ہلاک ہوئے۔ ایک سرکاری عہدیدار کے بموجب جھڑپ کا آغاز اُس وقت ہوا جب القاعدہ کے بندوق برداروں نے شہر سیون میں فوجی ہیڈکوارٹرس پر حملہ کیا۔ یہ شہر جہادیوں کا مستحکم گڑھ سمجھا جاتا ہے۔ فوج نے سیون پر اپنا قبضہ بحال کرلیا ہے اور شہر میں عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی کا آغاز کردیا۔ کل بھی دو فوجی ہلاک اور دو زخمی ہوگئے تھے

جبکہ بندوق برداروں نے سیون کی جانب پیشرفت کرنے والی فوج پر حملہ کیا تھا۔ وزارت دفاع کے بموجب تصادم میں 18 عسکریت پسند ہلاک ہوگئے۔کل دیگر پانچ فوجی شمالی صوبہ شبوا میں گھات لگاکر کئے ہوئے حملہ میں ہلاک کردیئے گئے۔ وزارت داخلہ کی خصوصی فوج کے تین ارکان کو رادا کے مقام پر جو مرکزی صوبا بیزا میں واقع ہے ، گھات لگاکر حملہ میں ہلاک کیا گیا تھا۔ 4 فوجی حضرموت کے علاقہ میں گھات لگاکر حملہ میں ہلاک کئے گئے تھے جبکہ 4 ملازمین پولیس سبوا میں پولیس چوکی پر حملہ کے دوران ہلاک ہوئے تھے۔ فوج نے اِن حملوں کا الزام القاعدہ پر عائدکیا ہے۔ امریکہ اِس تنظیم کو انتہا پسندوں کا مہلک نیٹ ورک قرار دے چکا ہے۔ اپریل کے اواخر میں فوج نے شبوا میں ریبی صوبہ ابیان کے مطابق پر جارحانہ زمینی کارروائی کا آغاز کا تھا۔ یہ گروپ یمن کے کئی علاقوں میں سرگرم ہے۔

TOPPOPULARRECENT