Sunday , November 19 2017
Home / مذہبی صفحہ / یوم میلادالنبی ﷺ کو چھپی ہوئی حقیقت ظاہر ہوئی

یوم میلادالنبی ﷺ کو چھپی ہوئی حقیقت ظاہر ہوئی

یوم میلاد النبی وہ مبارک دن ہے جبکہ باطل فنا ہوا اور حق اپنے نورانی چہرے کے ساتھ ظاہر ہوا۔یہ وہ یوم سعید ہے جبکہ ایمان کا تابندہ ستارہ جزیرہ نما عرب سے افق عالم پر طلوع ہوا اور اپنی ٹھنڈی روشنی سے نابینا دلوں کو بینا کردیا۔ حضرت بی بی آمنہؓ کا لال کائنات کی تخلیق کا باعث بنا اور لولاک لما کے خداوندی خطاب سے نوازا گیا۔یہ وہ میمون و مقدس دن ہے جبکہ حجابات میں چھپی ہوئی حقیقت واضح ہوئی اور دنیا کے سب مجاز خاموش ہوگئے۔
یہ وہ سچا دن ہے جبکہ مذبذب لوگوں کے لئے یقین پیدا ہوا۔ تمام انبیائے سابقین کی تعلیمات کذب و تحریف سے پاک ہوکر سامنے آئیں اور تمام آسمانی کتب تحریف سے پاک ہوکر اصل صداقت کے ساتھ سامنے آئیں۔
یہ وہ دن ہے جبکہ کفر کی دنیا میں صف ماتم بچھ گئی، بت سرنگوں ہوئے اور اصنام پرستی کی اینٹ سے اینٹ بج گئی۔
یہ وہ مبارک دن ہے جبکہ انسانیت مسلسل گریہ وزاری کے بعد پہلی بار خوشی سے مسکرائی جبکہ اس نے ظلم اور جبر سے جھکی ہوئی گردن پہلی بار آسمان کی طرف اٹھائی اور خدائے ذوالجلال کا سجدۂ شکر ادا کیا کہ اُن کا نجات دہندہ مبعوث ہوگیا اور ان کو راہ ہدایت پر چلانے والا کائنات ارضی میں تشریف لے آیا۔
یہ وہ انقلاب آفریں یوم جلیل ہے جبکہ بدی نے سچائی کا ظلم نے رحم و کرم کا تمر دوسرکشی نے امن و سلامتی کا، زبوں حالی نے عروج اور بلندی کا، ذات پات کے امتیاز نے مساوات و اخوت کا، انفرادیت نے اجتماعیت کا، اجتماعیت نے انسانیت کا، سرمایہ داری نے غربت نوازی کا، بد اعمالی نے حسن اخلاق کا، دہریت نے خدا پرستی کا، شرک نے توحید کا پیکر بدلا۔
یہ وہ دن ہے جبکہ خدا اور بندوں کے تعلقات از سر نو قائم ہوئے، انسانیت مکمل ہوئی اور صدیوں کی پیاسی انسانی روح کو پہلی بار معرفت، محبت اور حقیقت کا جام شیریں ملا، اور اس نے رنگ و نسل اور کالے گورے کی تفریق مٹادی۔یہ وہ یوم سعید ہے جبکہ سیدالمرسلین، خاتم النبیین، رحمۃ للعالمین، شفیع المذبنین، انیس بے کساں، سرکار ابد قرار، سرور سروراں، حضرت محمد مصطفیٰ  ﷺ خاکدان گیتی پر جلوہ افروز ہوئے۔ ہماری جانیں آپ کی آمد پر نثار ہوں ہماری روحیں اس یوم مقدس پر قربان جائیں ہماری جان و مال اولاد و اطفال سب آپ پر قربان ہوں۔
یہ وہی مبارک دن ہے کہ اس دن مکہ مکرمہ کے ایک گوشہ میں ایک نوری پیکر پیدا ہوا۔ جس نے چالیس سال کی منازل سن شریف گزار کر اعلان نبوت فرمایا اور ختم المرسلین کے منصب جلیل پر فائز ہوا۔یہ وہ مبارک دن ہے جبکہ دنیا میں ایک معلم اخلاق پیدا ہوا۔ اس محسن انسانیت نے لوگوں کو نیک اطواری کی طرف بلایا اور ان کے سامنے عمدہ اخلاق کا ایک دستور حیات اور خود اپنی زندگی پاک کا ایک نمونہ پیش فرمایا۔
یہی وہ یوم مسعود ہے جس دن لوگوں میں اخوت و مساوات، عدل و انصاف اور خدا پرستی کی روح پھونکی۔
[email protected]

TOPPOPULARRECENT