Sunday , December 17 2017
Home / سیاسیات / یوپی کو ذات پات اور خوشنودی کی سیاست سے آزاد کرنے کی ضرورت

یوپی کو ذات پات اور خوشنودی کی سیاست سے آزاد کرنے کی ضرورت

گورکھپور کے سرکاری پراجکٹوں کے افتتاح کیلئے بھومی پوجن کے بعد یوگی آدتیہ ناتھ کا خطاب
گورکھپور ۔16 اکٹوبر۔( سیاست ڈاٹ کام) اُترپردیش کے چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے اس ریاست کو ذات پات اور خوشنودی کی سیاست سے نجات دلانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے دعویٰ کیا کہ گزشتہ 15 سال کے دوران یہ دونوں برائیوں کا بکثرت استعمال ہوتا رہا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ’’اُترپردیش کو طاقتور بنانے کیلئے یہ ضروری ہے کہ ہم اس قسم کی سیاست کو ختم کریں جس پر گزشتہ 15 سال سے عمل کیا جاتا رہا ہے ‘‘ ۔ آدتیہ ناتھ نے جو دو روزہ دورہ پر یہاں پہونچے کہا کہ ’’ہندوستان صرف اُس وقت ہی مضبوط و باصلاحیت ہوسکتا ہے جب اُترپردیش مضبوط و باصلاحیت بن جائے اور اس کے لئے ہمیں ذات پات اور خوشنودی کی سیاست کو ختم کرنا ہوگا جس پر گزشتہ 20-15 سال سے عمل کیا جاتا رہاہے ‘‘ ۔ چیف منسٹر یہاں تیل کے ایک گیس ٹرمینل اور ہندوستان فرٹیلائزر کارپوریشن لمیٹیڈ کی بھومی پوجن تقریب سے خطاب کررہے تھے ۔ یوگی آدتیہ ناتھ نے اس ریاست کے پوروانچل علاقہ کی ترقی کیلئے ان کی حکومت کی طرف سے کئے گئے مختلف اقدامات کا تذکرہ کیا۔ انھوں نے کہاکہ ’’کسانوں سے ہم 37 لاکھ میٹرک ٹن گیہوں خریدچکے ہیں جبکہ سابق حکومت پانچ سال کے دوران 30 لاکھ میٹرک ٹن گیہوں بھی خرید نہیں پائی تھی ۔ گورکھپور میں ایک شوگر مل کا افتتاح کیا جائے گا جس میں ایک ڈسٹلری اور برقی پیداواری یونٹ بھی رہے گا ۔ اس سے علاقہ میں روزگار میں اضافہ ہوگا‘‘ ۔

 

TOPPOPULARRECENT