Monday , October 22 2018
Home / ہندوستان / یوپی کے رکن اسمبلی کو داؤد ابراہیم سے جان کی دھمکی کا دعویٰ

یوپی کے رکن اسمبلی کو داؤد ابراہیم سے جان کی دھمکی کا دعویٰ

’’جینا ہے تو ایک کروڑ روپئے ادا کر، ورنہ ایک گولی کافی ہے‘‘ دھمکی آمیز میسیج
لکھنؤ۔ 12 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے ضلع بلیا سے تعلق رکھنے والے بی ایس پی کے ایک رکن اسمبلی نے مفرور انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم سے اپنی جان کو دھمکی کا دعویث کرتے ہوئے پولیس میں ایک شکایت درج کرائی ہے اور پولیس تحقیقات میں مصروف ہے۔ بلیا کے رکن اسمبلی اوما شنکر سنگھ نے آج یہاں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ’’6 اگست کو مجھے ایک ٹیکسٹ میسیج موصول ہوا تھا جس میں مجھ سے اپنا ای۔میل دیکھنے کیلئے کہا گیا تھا اور مَیں نے اس پر توجہ نہیں دی تاہم بعد میں ای۔ میل دیکھا۔ جب میں دہلی پہونچ چکا تھا، بالعمول مجھے نوجوانوں کے ای۔ میل ہوتے ہیں جو اپنا بائیو ڈیٹا بھیجتے ہیں چنانچہ میں اس کو بھی یہی سمجھا اور بعد میں کسی وقت دیکھنے کا فیصلہ کیا تھا۔ سنگھ نے جو بلیا کے حلقہ راسرا کے رکن اسمبلی ہیں، کہا کہ دو دن میں اس نمبر سے ایک دو میسیج دستیاب ہوا، جس میں درج تھا۔ ’’آخری وارننگ! جینا یا مرنا ایک کروڑ روپئے‘‘۔ اوما شنکر سنگھ نے کہا کہ ’’ای۔ میل دیکھا گیا جس میں داؤد ابراہیم کی ایک تصویر بھی تھی۔ اس ای۔ میل میں یہ بھی کہا گیا تھا کہ اوما شنکر تم بلیا کے عوام کی خدمت کررہے ہیں، اگر آپ یہ جاری رکھنا چاہتے ہیں تو ایک کروڑ روپئے ادا کرو، ورنہ تمہارے لئے ایک بلٹ کافی ہوگی۔ ہم کسی بھی وقت تم کو ہلاک کرسکتے ہیں‘‘ بی ایس پی رکن اسمبلی نے کہا کہ ٹرو کالر آئی ڈی پیر یہ نمبر داؤد ابراہیم ٹیکسٹ گروپ کے نام تھا۔

TOPPOPULARRECENT