Monday , June 18 2018
Home / دنیا / یوکرینی باغیوں کے نئے حملے، 50سرکاری فوجی ہلاک

یوکرینی باغیوں کے نئے حملے، 50سرکاری فوجی ہلاک

کییف۔11 فبروری۔(سیاست ڈاٹ کام) بحران زدہ یوکرائن کے خونریزی کے شکار مشرقی حصے میں روس نواز علیحدگی پسندوں کے نئے حملوں میں کم از کم 50 سرکاری فوجی ہلاک اور 78 دیگر زخمی ہو گئے ہیں۔ یہ حملے ایک انتہائی اہم ریلوے جنکشن کے قریب ایک قصبے میں کیے گئے۔ یوکرائن کے دارالحکومت کییف سے موصولہ نیوز ایجنسی روئٹرز کی رپورٹوں کے مطابق فوج کے ایک ترج

کییف۔11 فبروری۔(سیاست ڈاٹ کام) بحران زدہ یوکرائن کے خونریزی کے شکار مشرقی حصے میں روس نواز علیحدگی پسندوں کے نئے حملوں میں کم از کم 50 سرکاری فوجی ہلاک اور 78 دیگر زخمی ہو گئے ہیں۔ یہ حملے ایک انتہائی اہم ریلوے جنکشن کے قریب ایک قصبے میں کیے گئے۔ یوکرائن کے دارالحکومت کییف سے موصولہ نیوز ایجنسی روئٹرز کی رپورٹوں کے مطابق فوج کے ایک ترجمان نے آج بتایا کہ روس نواز علیحدگی پسندوں نے یہ متعدد حملے قصبہ دیبالسیف میں کئے اور یوکرائنی فوج اس علاقے میں اپنی پوزیشنوں کے دفاع کی بھرپور کوششیں کر رہی ہے۔فوجی ترجمان نے ایک بریفنگ کے دوران بتایا، ’’ان حملوں میں علیحدگی پسند مسلح باغیوں نے فوجی دستوں پر گولہ باری کرنے کے علاوہ راکٹ بھی برسائے جس کے نتیجے میں اطراف کے مابین لڑائی بھی شروع ہو گئی اور مجموعی طور پر مسلح افواج کے 17 ارکان اور وزارت داخلہ کے دو فوجیوں سمیت 19 سکیورٹی ملازمین مارے گئے جبکہ 78 فوجی زخمی ہوئے۔‘‘نیوز ایجنسی اے ایف پی نے اپنی رپورٹوں میں لکھا ہے کہ روس نواز باغیوں نے گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران مشرقی یوکرائن میں سرکاری دستوں پر جو نئے حملے کیے،

ان میں علاقائی دارالحکومت کراماٹورسک پر کیا جانے والا وہ بڑا راکٹ حملہ بھی شامل ہے، جو پانچ فوجیوں کی ہلاکت کا باعث بنا۔اسی دوران مشرقی یوکرائن کے شہر ڈونیٹسک سے موصولہ رپورٹوں میں بھی بتایا گیا ہے کہ وہاں علیحدگی پسندوں اور حکومتی دستوں کے مابین شدید لڑائی آج بھی جاری ہے جبکہ آج ہی بیلاروس کے دارالحکومت مِنسک میں یوکرائن رابطہ گروپ کا ایک سربراہی اجلاس بھی ہو رہا ہے، جس میں اب تک کے پروگرام کے مطابق جرمن چانسلر انگیلا میرکل اور فرانسیسی صدر فرانسوا اولاند اپنے یوکرائنی اور روسی ہم منصب رہنماؤں پیٹرو پوروشینکو اور ولادیمیر پوٹن کے ساتھ مشرقی یوکرائن میں قیام امن کے بارے میں انتہائی اہم مذاکرات کرنے والے ہیں۔ اے پی نے بتایا کہ روس نواز باغیوں کی طاقت کا مرکز کہلانے والے شہر ڈونیٹسک میں ایک بس اسٹیشن پر راکٹ حملے کیے گئے جبکہ شہری انتظامیہ کے بقول منگل اور چہارشنبہ کی درمیانی رات بھی وہاں کم از کم تین افراد مارے گئے۔

TOPPOPULARRECENT