Tuesday , December 18 2018

یوکرین کا مسئلہ حل کرنے بات چیت جاری رہے گی : کیری

پیرس ، 6 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) یوکرین کے بحران کے حل کیلئے امریکہ اور روس کے درمیان اعلیٰ سطح کے رابطے ہوئے ہیں۔ تاہم کوئی بڑی پیش رفت سامنے نہیں آئی۔ امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ بات چیت کا سلسلہ جاری رہے گا۔ یوکرین کے بحران پر بات چیت کیلئے امریکی وزیر خارجہ نے اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف سے فرانس کے دارالحکومت پیرس می

پیرس ، 6 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) یوکرین کے بحران کے حل کیلئے امریکہ اور روس کے درمیان اعلیٰ سطح کے رابطے ہوئے ہیں۔ تاہم کوئی بڑی پیش رفت سامنے نہیں آئی۔ امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ بات چیت کا سلسلہ جاری رہے گا۔ یوکرین کے بحران پر بات چیت کیلئے امریکی وزیر خارجہ نے اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف سے فرانس کے دارالحکومت پیرس میں ملاقات کی۔ اس موقع پر برطانیہ، فرانس اور یوکرین کے وزرائے خارجہ بھی موجود تھے۔ تاہم خبر رساں ادارہ روئٹرز کے مطابق لاوروف نے یوکرین کے اپنے ہم منصب کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا۔ کیری اور لاوروف کے درمیان جمعرات کو اٹلی کے دارالحکومت روم میں بھی ایک ملاقات متوقع ہے۔ چہارشنبہ کو پیرس میں بات چیت کے بعد کیری کا کہنا تھا: ’’ایسا مت سمجھیں کہ ہم نے کوئی سنجیدہ بات چیت نہیں کی، جس کے نتیجے میں بحران کے حل کیلئے تخلیقی اور مناسب طریقے سامنے آسکتے ہیں۔‘‘

جان کیری کا مزید کہنا تھا: ’’صورتِ حال بہت خراب ہے اور تنازعہ گمبھیر ہے، میرا نہیں خیال کہ اِن حالات میں ہم میں سے کسی نے بھی یہاں آنے سے پہلے یہ سوچا ہوگا کہ یہ مسئلہ آج یہیں حل کر لیا جائے گا۔‘‘ قبل ازیں روس نے مغربی ملکوں کا یہ مطالبہ ردکر دیا تھا کہ یوکرین کے شورش زدہ علاقے کریمیا سے اس کی فوجیں واپس اپنے اڈوں پر لوٹ جائیں۔ اُدھر برسلز میں مغربی دفاعی اتحاد نیٹو نے روس کے ساتھ تعاون محدود کرنے کا اعلان کیا ہے۔ نیٹو کے سکریٹری جنرل آندرس فوگ راسموسن نے چہارشنبہ کے روز بتایا کہ مغربی اتحاد اب روس کے ساتھ کم سطحی میٹنگوں کا سلسلہ جاری نہیں رکھے گا۔ راسموسن کے مطابق یوکرین کی صورتحال سے یورپی اور بحر اوقیانوس کے ملکوں پر گہرے اثرات مرتب ہوئے ہیں۔ سرد جنگ کے خاتمے کے بعد مغربی دفاعی اتحاد اور روس کے درمیان باہمی تعلقات میں بتدریج بہتری ہو رہی تھی۔ نیٹو کا کہنا ہے کہ یوکرین کی نئی قیادت کے ساتھ تعاون کیا جائے گا۔

اس کے ساتھ ہی یورپی یونین نے یوکرین کے معزول صدر وکٹر یانوکووچ سمیت 18 افراد کی جائیدادیں منجمد کرنے کا اعلان کیا ہے۔ خبر رساں ادارہ ڈی پی اے کے مطابق ان پر یوکرین کے سرکاری فنڈز میں خردبرد کا الزام ہے۔ فرانسیسی خبررساں ادارہ اے ایف پی نے نیویارک میں سفارت کاروں کے حوالے سے بتایا ہے کہ یوکرین کے بحران پر غور کیلئے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا ایک اجلاس جمعرات کو ہو رہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس موضوع پر سلامتی کونسل کا یہ چوتھا مشاورتی اجلاس ہو گا جس کیلئے اس کے پندرہ رکن ملکوں کے سفارت کار عالمی وقت کے مطابق شام ساڑھے سات بجے ملاقات کریں گے۔ اس حوالے سے سلامتی کونسل کا گزشتہ اجلاس پیر کو ہوا تھا۔ اس وقت روس نے شرکاء کو بتایا تھا کہ وکٹر یانوکووچ نے یوکرین میں امن و امان کیلئے ماسکو حکومت سے وہاں اپنی افواج روانہ کرنے کی درخواست کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT