Tuesday , July 17 2018
Home / Top Stories / یوگا جیسی ورزش آج کے کشیدہ ماحول کیلئے بالکل مناسب

یوگا جیسی ورزش آج کے کشیدہ ماحول کیلئے بالکل مناسب

اقوام متحدہ کے سبزہ زار پر دو گھنٹے تک یوگا سیشن
سفراء ، سفارتکار، روحانی قائدین اور بچوں کی شرکت
ڈپٹی سکریٹری جنرل آمنہ محمد کا خطاب

اقوام متحدہ ۔ 21 جون (سیاست ڈاٹ کام) اقوام متحدہ کی ڈپٹی سکریٹری جنرل نے آج یوگا سے متعلق ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ یوگا نہ صرف اقوام متحدہ کیلئے بلکہ آج کے اس کشیدگی سے پرماحول میں جہاں دماغی تناؤ ایک عام سی بات ہوگئی ہے، کیلئے بھی ایک کارگر ورزش ہے جو نہ صرف جسم کو بلکہ دماغ کو بھی راحت بخشتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں زمانہ قدیم سے کی جانے والی اس ورزش کی آج بھی اہمیت ہے۔ اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل مشن میں فلیگ شپ یوم یوگا منائے جانے کے موقع پر اقوام متحدہ کے سفرائ، سفارتکار، روحانی قائدین، سیول سوسائٹی کے ارکان کے علاوہ بچوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی جہاں تقریباً دو گھنٹے تک چلنے والے یوگا سیشن میں سب نے حصہ لیا جس کا تھیم تھا ’’یوگا فارپیس‘‘ (امن کیلئے یوگا)۔ شرکاء نے اس موقع پر یوگا کے مختلف آسنوں کا مظاہرہ کیا۔ اس وقت یہ ورزش انجام دینے کیلئے فرش پر رنگ برنگی شطرنجیاں بچھائی گئی تھیں جس نے اقوام متحدہ کے ہیڈکوارٹر کے شمالی سبزہ زار کا احاطہ کر رکھا تھا۔ اقوام متحدہ کی ڈپٹی سکریٹری جنرل آمنہ محمد نے بین الاقوامی یوم یوگا کی چوتھی سالگرہ کے موقع پر اپنے خطاب کے دوران کہا کہ آج دنیا کے حالات بیحد پیچیدہ اور پُرآشوب ہیں۔ چاہے بزرگ ہوں، نوجوان طبقہ ہو یا بچے ہوں، ہر کوئی آج کی مصرف زندگی کا حصہ ہے اور مصروفیت کے نام پر ذہنی تناؤ نے سب کا ذہنی و قلبی سکون غارت کر رکھا ہے۔ یوگا ایک ایسی قدیم ورزش ہے جو جسمانی اور ذہنی سکون عطا کرتا ہے۔ انہوں نے اس موقع پر ہندوستان سے اظہارتشکر کیا کہ یوم یوگا کے انعقاد کے ذریعہ اس نے نہ صرف ہندوستانیوں کو بلکہ دنیا کی ساری عوام کو ذہنی اور قلبی سکون حاصل کرنے کا راستہ بتایا۔ انہوں نے کہا کہ امن اور سلامتی، انسانی حقوق، ترقی اقوام متحدہ کے تین اہم ستون ہیں اور یہی وہ اقدار ہیں جہاں یوگا اپنا اہم رول ادا کرتا ہے۔ انسانی زندگی میں اگر توازن برقرار رکھا جائے تو انسان ایک طویل اور صحتمند زندگی بسر کرسکتا ہے جبکہ انسان ہونے کے ناطے انسانیت پر عمل آوری سب سے زیادہ اہمیت کی حامل ہے۔ آج انسانوں نے انسانیت کو فراموش کردیا ہے اور دنیا میں جنگ و جدال کے ذریعہ لاکھوں لوگوں کو جانوروں کی طرح ہلاک کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یوگا سے انہوں نے بہت کچھ سیکھا اور کیا ہی اچھا ہوتا کہ کاش یوگا کے بارے میں اتنی ساری تفصیلات انہیں پہلے معلوم ہوئی ہوتی۔ اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندہ سید اکبرالدین نے بھی یوگا سے متعلق اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جب سے یوم یوگا کو عالمی سطح پر منائے جانے کا سلسلہ شروع ہوا ہے اس کی مقبولیت میں اضافہ ہوا ہے۔ یوگا جیسی ورزش کوئی بھی انجام دے سکتا ہے چاہے وہ بچہ ہو، جوان ہوا، بوڑھا ہو، مرد ہو یا عورت ہو، یوگا کے ذریعہ نہ صرف انفرادی بلکہ اجتماعی فائدے بھی حاصل کرسکتا ہے کیونکہ سب جانتے ہیں کہ ’’یوگا ورکس‘‘ یعنی یوگا ایک کارآمد چیز ہے۔

TOPPOPULARRECENT