یو اے ای سے رہائی پانے والے ہیجیز بحفاظت لندن پہنچ گئے

چھ ماہ قید تنہائی میں گزارے
لندن ۔ 27 نومبر ۔(سیاست ڈاٹ کام) برطانوی ماہر تعلیم میتھو ہیجز جس پرجاسوسی کا الزام عائد کرتے ہوئے یو اے ای میں اُنھیں سزائے عمرقید سنائی گئی تھی تاہم یو اے ای کے قومی دن کے موقع پر دیگر قیدیوں کو عام معافی دیئے جانے کے بعد میتھیو بھی اسی معافی کے تحت رہا کردیئے گئے تھے ، وہ آج یو اے ای سے لندن پہنچے ۔ میتھیوز ہیجیز کو سات ماہ تک قید میں رکھا گیا تھا جن میں سے چھ ماہ قید تنہائی میں گزارے ۔ رہائی ملنے کے بعد پی ایچ ڈی اسکالر آج بحفاظت لندن پہنچے جہاں اُن کے ارکان خاندان نے اُن کا استقبال کیا۔ اس موقع پر جذباتی انداز میں ہیجیز نے کہاکہ آخر میں اظہارتشکر کیلئے اپنے الفاظ کی کہاں سے ابتداء کروں ۔ میں اُن تمام لوگوں کا شکرگزار ہوں جنھوں نے میری رہائی کیلئے کوششیں کیں۔ یاد رہے کہ ہیجیز کی واپسی کے بعد یو اے ای اور برطانیہ کے درمیان کشیدگی کا ایک دور ختم ہوگیا کیونکہ جاسوسی کے الزام میں ہیجیز کو سزائے عمرقید سنانے سے نہ صرف برطانیہ بلکہ ہیجیز کی اہلیہ بھی حیرت زدہ رہ گئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT