Wednesday , June 20 2018
Home / سیاسیات / یو پی، مہاراشٹرا اور کرناٹک میں آگ ہی آگ

یو پی، مہاراشٹرا اور کرناٹک میں آگ ہی آگ

یو پی کے بی آر ڈی ہسپتال ، مہاراشٹرا کی عدالت اور کرناٹک کے ریسٹورنٹ و بار میں آتشزدگی ، وجوہات نامعلوم ، تحقیقات جاری

گورکھپور۔8 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) تین ریاستوں میں آج اندرون چند گھنٹے آتشزدگی کی تین واردارتیں پیش آئیں۔ گورکھپور میں بڑے پیمانے پر آتشزدگی سے ایک پرنسپال کا دفتر اور اس سے متصلہ ریاستی بی آر ڈی ہاسپٹل کا ریکارڈ روم آگ کی گرفت میں آگیا۔ آگ سے ریکارڈ روم کی اہم دستاویزات جو بابا راگھو داس میڈیکل کالج ہاسپٹل کے ریکارڈ روم میں رکھی ہوئی تھیں، جل کر خاکستر ہوگئیں۔ یہ اسی اسپتال کا ادارہ ہے جہاں گزشتہ سال آکسیجن کی قلت سے درجنوں شیرخوار بچے فوت ہوگئے تھے۔ پولیس کے بموجب اس کی وجہ شارٹ سرکٹ ہوسکتی ہے۔ مقامی سماج وادی پارٹی قائد نے آتشزدگی کی اس واردات کو پراسرار قرار دیا اور اہم فائلوں کے تباہ ہوجانے کی تحقیقات کروانے کا مطالبہ کیا۔ آتش فرو محکمہ کے چیف آفیسر ٹی کے سنگھ نے کہا کہ وجوہات کی تحقیقات کے لیے ایک کمیٹی قائم کردی گئی ہے ۔ فائر انجمنوں کو اس آگ کو قابو پانے کے لیے ایک گھنٹہ صرف ہوا۔ ممبئی سے موصولہ اطلاع کے بموجب سیشن کورٹ کی عدالت کی تیسری منزل پر آج صبح آگ بھڑک اٹھی۔ ایک عہدیدار کے بموجب کسی بھی ہلاکت یا کسی کے بھی زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ملی۔ بعض سرکاری ریکارڈس آگ میں جل کر تباہ ہوگئے۔ یہ آتشزدگی کا گزشتہ تین ہفتوں میں پانچواں واقعہ تھا۔ آتش فرو محکموں نے کہا کہ 7:14 بجے صبح عدالت کے احاطہ میں آگ بھڑک اٹھنے کی اطلاع ملی تھی۔ یہ عدالت ممبئی یونیورسٹی کے احاطہ میں شہر کے جنوبی علاقہ میں واقع ہے۔ برہمن ممبئی مجلس بلدیہ آفات سماوی انتظامیہ شعبہ نے کہا کہ آتش فرو محکمہ کے ارکان فوری موقع واردات پر پہنچ گئے اور عمارت میں بھڑک اٹھنے والی آگ کو بجھانے کی کوشش کی جو تہذیبی ورثہ کا سامان رکھنے والی عمارت ہے۔ پولیس اور آتش فرو محکموں کے عہدیدار اب بھی آتشزدگی کی وجہ جاننے سے قاصر ہیں۔ سیشن کی عدالت کے ایک عہدیدار نے کہا کہ متعلقہ عدالتوں میں ججس حسب معمول 11 بجے دن پہنچ گئے تھے اور مقدمات کی کارروائی معمول کے مطابق شروع کردی گئیں۔ بنگلورو سے موصولہ اطلاع کے بموجب بڑے پیمانے پر آتشزدگی کی ایک واردات ایک ریسٹوان اور بار ’’رسٹوبار‘‘ میں پیش آئی جو ایک 70 سالہ قدیم عمارت میں جو شہر کے ایک مصروف علاقہ میں واقع ہے۔ اس واردات میں 5 محو خواب افراد ہلاک ہوگئے۔ آتشزدگی کی واردات نیچے کی منزل پر واقع کیلاش بار اینڈ ریسٹورنٹ سے شروع ہوئی تھی اور ڈھائی بجے رات دھواں اٹھتا ہوا دیکھا گیا۔ بعض افراد نے قریبی فائر بریگیڈ کو اس کی اطلاع دی۔ 2 فائر انجن اور 5 آگ سے بچائو گاڑیاں تعینات کی گئیں۔ آگ بجھائی جاچکی ہے۔ آگ بھڑکنے کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی اور اس کی تحقیقات جاری ہیں۔ ریسٹوبار کا مالک وی آر دیاشنکر مفرور ہے۔ وزیر داخلہ کرناٹک راما لنگا ریڈی نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ اپنے ملازمین کا تحفظ بار کے مالک کی ذمہ داری ہے۔ پولیس اس کے خلاف جلد ہی ایک مقدمہ درج کرکے اسے گرفتار کرلے گی۔

TOPPOPULARRECENT