Saturday , September 22 2018
Home / ہندوستان / یو پی اردو اکیڈیمی تشکیل نو معاملہ پر آج سماعت

یو پی اردو اکیڈیمی تشکیل نو معاملہ پر آج سماعت

لکھنو ۔ 22 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) الہ آباد ہائی کورٹ (لکھنو بنچ) میں ہائی کورٹ کے سینئر وکیل مسٹر محمد فاروق ایڈوکیٹ نے توہین عدالت کی ایک درخواست گزاری ہے جس پر 23 جنوری کو سماعت متوقع ہے ۔ درخواست گزار کے مطابق روایتی حکومت نے الہ آباد ہائی کورٹ لکھنو بنچ کے اس فیصلہ پر عمل درآمد نہیں کیا ہے جس کی رو سے اترپردیش اردو اکیڈیمی کی تشکیل ن

لکھنو ۔ 22 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) الہ آباد ہائی کورٹ (لکھنو بنچ) میں ہائی کورٹ کے سینئر وکیل مسٹر محمد فاروق ایڈوکیٹ نے توہین عدالت کی ایک درخواست گزاری ہے جس پر 23 جنوری کو سماعت متوقع ہے ۔ درخواست گزار کے مطابق روایتی حکومت نے الہ آباد ہائی کورٹ لکھنو بنچ کے اس فیصلہ پر عمل درآمد نہیں کیا ہے جس کی رو سے اترپردیش اردو اکیڈیمی کی تشکیل نو 11 جنوری تک کردینی چاہئے تھی لیکن ریاستی حکومت نے ابھی تک یو پی اردو اکیڈیمی کی تشکیل نو نہیں کی ہے ۔ درخواست گزار محمد فاروق ایلاوکیٹ کے بموجب اردو اکیڈیمی کی تشکیل نو کی بابت انہوں نے ہائی کورٹ میں ایک درخواست گزاری تھی جس پر فاضل عدالت نے 2 ڈسمبر ریاستی حکومت کو یہ ہدایت دی تھی کہ وہ چھ ہفتہ کے اندر یو پی اردو اکیڈیمی کی تشکیل نو کردے، یہ مدت 11 جنوری کو پوری ہوگئی ۔

یو پی کانگریس کے تمام اعلیٰ قائدین کی میرٹھ میں گرفتاری
لکھنو ۔ 22 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) میرٹھ کے ض لع حکام نے آج غذائی تحفظ بل کے نفاذ ، کاشتکاروں کے مسائل پر اترپردیش کانگریس کے دھرنے ، مظاہرہ پر پابندی لگادی جس کے خلاف سینکڑوں کارکنوں نے احتجاجی گرفتاریاں دیں۔ یو پی کانگریس کے صدر نرمل کھتری ایم بی ، پی ایل فونیا ایم پی ، راج ببر ایم پی ، پردیپ ساتر ایم ایل اے ، نصیب چٹھان ایم ایل سی ، ریٹا بہوگنا جوشی سمیت تمام لیڈروں کو ضلع حکام نے اس وقتگرفتار کرلیا، جب یہ لوگ کلکٹریٹ میں دھرنا، مظاہرہ کیلئے جارہے تھے، ان لیڈروں کو پولیس لائین لایا گیا جہاں دیر شام ان تمام لیڈروں کو رہا بھی کردیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT