Friday , June 22 2018
Home / ہندوستان / یو پی اے پر شمال مشرق کو نظرانداز کرنے مودی کا الزام

یو پی اے پر شمال مشرق کو نظرانداز کرنے مودی کا الزام

پیشرو وزیراعظم نے ’ورک لوڈ‘ کا بہانہ بناکر کبھی ریاست کا دورہ نہیں کیا

ایٹانگر ۔ 15 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم نریندر مودی نے آج یہاں اپنے پیشرو یو پی اے حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ یو پی اے میں شمال مشرقی ریاستوں کو ہمیشہ نظرانداز کیا ہے ۔ جب کہ ان کی ( این ڈی اے ) حکومت شمال مشرقی ریاستوں کو اہمیت دیتے ہوئے مرکزی وزراء اور سرکاری عہدیداروں کو اس خطہ میں متواتر دورے کرتے رہتے ہیں ۔ نریندر مودی یہاں اندرا گاندھی پارک میں ایک عوامی جلسہ میں یہ بات کہی ۔ یہاں انہوں نے ٹومو ریبا انسٹی ٹیوٹ آف ہیلت اینڈ میڈیکل سائنس کی سنگ بنیاد رکھنے کے بعد جلسہ سے خطاب کررہے تھے ۔ اس موقع پر انہوں نے اعلان کیا کہ ویکلی ٹرین ’اروناچکلی‘نہارلگل نئی دہلی ایکسپریس ‘ جو ہفتہ میں دو بار چلائی جاتی ہے اب اس کا نام ’اروناچل پردیش ایکسپریس ‘ ہوجائے گا ۔ خطہ کی اہمیت اُجاگر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اہم ترین اجلاس اب صرف دارالحکومت میں ہی منعقد نہیں کئے جائیں گے بلکہ ہم نے تمام ریاستوں میں ایسے اجلاس کے انعقاد کا فیصلہ لیا ہے اور یہی وجہ ہے کہ میں شمال مشرقی کونسل میٹنگ میں شامل ہونے کیلئے شیلانگ آیا ہوں ۔ ایک اہم ترین میٹنگ ہے جس میں زراعت سے متعلق اہم فیصلے لئے جائیں گے ۔ اپنے پیشرو وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ کا نام لئے بغیر مودی نے کہا کہ ہم سے پہلے کے وزیراعظم ورک لوڈ کا بہانہ کرتے ہوئے اس ریاست کا کبھی دورہ نہیں کیا ۔ مگر میں ایک ایسا وزیراعظم ہوں جو آپ لوگوںسے ملاقات کئے بغیر نہیں رہ سکتا ۔ واضح رہے کہ نریندر مودی کا یہ دوسرا دورہ اروناچل پردیش ہے جو پچھلے تین سال میں کیا جارہا ہے ۔پچھلے بار انہوں نے اس ریاست کا 2015ء میں دورہ کیا تھا ۔ اس موقع پر انہوں نے چیف منسٹر پریما کھنڈو کی زبردست ستائش کرتے ہوئے کہا کہ ان کی انداز کارکردگی حیرت ناک ہے ۔ انہوں نے ایسے معیاری روڈ میاپ تیار کیا ہے جس پر وہ 2027ء تک اروناچل پردیش کو کیسا ہونا چاہیئے اس کے خدوخال تیار کئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT