Wednesday , September 26 2018
Home / سیاسیات / یو پی اے کی شکست کیلئے منموہن سنگھ کی خاموشی ذمہ دار

یو پی اے کی شکست کیلئے منموہن سنگھ کی خاموشی ذمہ دار

مہاراشٹرا اسمبلی انتخابات کیلئے از سر نو تیاریاں۔ این سی پی ترجمان نواب ملک کا بیان

مہاراشٹرا اسمبلی انتخابات کیلئے از سر نو تیاریاں۔ این سی پی ترجمان نواب ملک کا بیان
ممبئی 22 مئی ( سیاست نیوز ) این سی پی نے آج کہا کہ کانگریس زیار قیادت یو پی اے اتحاد کو انتخابات میں شکست کی اصل وجہ یہ ہے کہ وزیر اعظم کی حیثیت سے منموہن سنگھ اور صدر کانگریس سونیا گاندھی کا عوام سے رابطہ نہیں رہا تھا ۔ پارٹی کا کہنا ہے کہ پٹرولیم اشیا اور پکوان گیس سلینڈرس کی قیمتوں میں اضافہ کے نتیجہ میں بھی یو پی اے اتحاد کو نقصان ہوا ہے ۔ پارٹی کے ترجمان نواب ملک نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب بی جے پی قائدین شدت سے مہم چلا رہے تھے اور حکومت کی پالیسیوں کے خلاف ہندی میں تقاریر کر رہے تھے تو ان کا زیادہ سے زیادہ تعداد میں عوام سے رابطہ ہوا ۔

وزیر اعظم کی حیثیت میں منموہن سنگھ ‘ یو پی اے صدر نشین کی حیثیت سے سونیا گاندھی اور وزیر فینانس کی حیثیت سے پی چدمبرم انگریزی میں جواب دے رہے تھے ۔ یہ بھی ایک وجہ ہے کہ یو پی اے اتحاد کو شکست ہوئی ہے ۔ این سی پی سربراہ شرد پوار نے پارٹی قائدین کا ایک اجلاس طلب کیا تھا تاکہ انتخابی شکست کے پیش نظر صورتحال کا جائزہ لیا جائے ۔ مہاراشٹرا میں اب اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں۔ نواب ملک نے میڈیا سے کہا کہ یو پی اے حکومت معاشی سست روی کے باوجود قومی مفاد میں کئے گئے فیصلوں سے بھی عوام کو واقف کروانے میں ناکام رہی ہے ۔ آج کے اجلاس میں کئی ریاستی وزرا اور سینئر قائدین بشمول پرفیل پٹیل ‘ گوند راؤ آڈک ‘ ارون گجراتی ‘ بابن راؤ پچپوتے اور دوسروں نے شرکت کی ۔ انہوں نے پارٹی کی شکست کی ذمہ داری سے متعلق سوال پر

کہا کہ ہم کسی سے استعفے طلب نہیں کر رہے ہیں اور نہ کسی کو ذمہ دار قرار دے رہے ہیں۔ انتخابات میں شکست کیلئے پوری پارٹی ذمہ دار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ شرد پوار کل پارٹی کے ارکان اسمبلی سے ‘ جن قائدین نے مقابلہ کیا ہے ان سے ‘ ضلع یونٹوں کے سربراہان سے ‘ عہدیداروں سے ملاقات کرینگے اور نتائج کا جائزہ لیں گے اور اسمبلی انتخابات کیلئے تیاریوں کا آغاز کرینگے ۔ ملک نے کہا کہ شرد پوار نے ریاستی وزرا سے کہا کہ وہ اپنی غلطیوں کو سدھاریں اور اسمبلی انتخابات کیلئے از سر نو تیاریوں کا آغاز کریں۔ حال ہی میں کانگریس قائد کمل ناتھ نے بھی پارٹی کی شکست کیلئے وزیر اعظم کی حیثیت سے ڈاکٹر منموہن سنگھ کی خاموشی کو ذمہ دار قرار دیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT