Saturday , November 25 2017
Home / Top Stories / یو پی حکمراں جماعت ایس پی میں اختلافات شدید

یو پی حکمراں جماعت ایس پی میں اختلافات شدید

اکھلیش کے حامی ایم ایل سی پارٹی سے خارج ، ریاست میں دستوری بحران نہیں: گورنر رام نائک

لکھنو ۔ /22 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) سماج پارٹی نے اپنے خلاف بغاوت کرنے والوں کو ایک سخت پیغام دیتے ہوئے آج قانون ساز کونسل کے ایک رکن اُدے ویر سنگھ کو خارج کردیا جنہوں نے ملائم سنگھ یادو کو مکتوب تحریر کرتے ہوئے چیف منسٹر اکھلیش یادو کو پارٹی کا قومی صدر بنانے کا مطالبہ کیا تھا ۔ ایس پی کے ریاستی ترجمان امبیکا چودھری نے کہا کہ ’’ادے ویر سنگھ کو ان کے غیر شائستہ اور ڈسپلن شکنی کے رویہ کے سبب چھ سال کے لئے پارٹی سے خارج کردیا گیا ہے ‘‘ ۔ چودھری نے کہا کہ پارٹی ، ڈسپلن شکنی اور ناشائستگی کو برداشت نہیں کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ڈسپلن کے سبب یہ پارٹی اس مقام پر پہونچی ہے جہاں 25 سال قبل تھی ۔ ادے ویر نے اس ہفتہ اپنی پارٹی کے قومی صدر ملائم سنگھ یادو کے نام چار صفحات پر مشتمل ایک مکتوب  روانہ کیا تھا ۔ جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ’’شیو پال یادو اور انکے خاندان کے دیگر ارکان نے آپ (ملائم) کو غلط باور کرواتے ہوئے گمراہ کیا ہے اور سی ایم اکھلیش کے خلاف سازش رچی ہے ۔ جنہیں (اکھلیش کو ) پارٹی کا قومی صدر بنایا جاناچاہئیے ۔ اُدے ویر نے پارٹی سے اپنے اخراج کے بارے میں ایک سوال پر جواب دیا کہ اصل مکتوب موصول ہونے کے بعد ہی وہ اپنا نقطہ نظر بیان کریں گے ۔

انہوں نے کہا کہ مکتوب میں اٹھائے گئے موضوعات پر انہیں کوئی افسوس نہیں ہے۔ اُدے ویر نے کہا کہ ’’پارٹی صدر کے خلاف جنہوں نے غلط زبان استعمال کیا تھا وہ ہنوز پارٹی میں ہیں لیکن جو حقیقی خیر خواہ ہیں اور مکتوب تحریر کیا کرتے ہیں ۔ انہیں خارج کیا جارہا ہے ‘‘ ۔ انہوں نے کہا کہ نیتاجی (ملائم سنگھ یادو) پارٹی کے سرپرست ہیں ۔ مجھے یقین ہے کہ وہ چیف منسٹر اور میرے ساتھ انصاف کریں گے ‘‘ ۔اس دوران  اتر پردیش میں حکمراں سماجوادی پارٹی میں جاری بحران پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے گورنر رام نائیک نے کہا کہ فی الحال کوئی دستوری بحران نہیں ہے۔ تاہم انہوں نے واضح کیا کہ اگر ایسی کوئی صورتحال پیدا ہوجائے تو قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی حکمراں جماعت میں جاری تبدیلیوں سے وہ باخبر ہیں فی الحال ایسا کوئی دستوری بحران نظر نہیں آتا۔ اگر مستقبل میں مداخلت کی ضرورت لاحق ہو تو قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ گورنر رام نائیک اتر پردیش میں سماجوادی پارٹی سربراہ ملائم سنگھ یادو کے خاندان میں جاری تلخ اختلافات پر ردعمل ظاہر کررہے تھے۔ ملائم سنگھ یادو کے بیٹے چیف منسٹر اکھلیش یادو اور بھائی ریاستی پارٹی صدر شیو پال یادو کے مابین اختلافات انتہائی شدید ہوگئے ہیں جس کی وجہ سے پارٹی میں پھوٹ کی قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT