Tuesday , August 21 2018
Home / Top Stories / یکم اپریل سے ای ۔ وے بل متعارف

یکم اپریل سے ای ۔ وے بل متعارف

ٹیکس ریٹرن GSTR-3B کے ادخال کیلئے جون تک توسیع
نئی دہلی ۔ 10 مارچ ۔( سیاست ڈاٹ کام ) تمام تر اختیارات کی حامل جی ایس ٹی کونسل نے آج فیصلہ کیا کہ یکم اپریل سے ریاستوں کے درمیان اشیاء کے حمل و نقل کیلئے الیکٹرانک بل کو لازمی بنایا جائے لیکن کاروباری اداروں کے لئے ٹیکس ریٹرنس داخل کرنے کے طریقہ کار کو سادہ بنانے کے بارے میں کوئی اتفاق رائے نہ ہوپایا ۔ چونکہ ریاستیں ریٹرن فائیل کرنے کے طریقوں کو سہل بنانے کے بارے میں منقسم رائے رکھتی ہیں ، اس لئے فائیلنگ کے موجودہ سسٹم کو مزید تین ماہ کیلئے بڑھادیا گیا ہے ۔ ایک وزراء گروپ ریٹرنس کے ادخال کو سہل بنانے کے کام پر پیشرفت جاری رکھے گا ۔ وزیر فینانس ارون جیٹلی نے کہاکہ مرکز اور ریاستوں کے ٹیکس عہدیداران چاہتے ہیں کہ ٹیکس ریٹرنس سادہ ہونا چاہئے ، لیکن ساتھ ہی وہ یہ بھی چاہتے ہیں کہ ٹیکس چوری کی کوئی گنجائش نہیں ہونی چاہئے ۔ جیٹلی نے کونسل کی میٹنگ کے بعد میڈیا کو بتایا کہ مختلف اُمور پر تفصیلی تبادلۂ خیال ہوا ۔ کونسل کا احساس ہے کہ ہر ماہ واحد ریٹرن کا ادخال ہونا چاہئے جو سادہ ہو لیکن ٹیکس چوری کی گنجائش نہ رہے ۔ اب اسے اس طرح سادہ بنایا جائے اس بارے میں غور و خوض جاری ہے ۔ لہذا آج اس ضمن میں کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ۔ موجودہ سسٹم میں تین ماہ کی توسیع کردی گئی ہے ۔ چنانچہ کاروباری ادارے اپنے ریٹرنس GSTR-3B کا ادخال بدستور جاری رکھیں گے اور فائنل سیلز ریٹرن GSTR-I جون تک رہے گا ۔

TOPPOPULARRECENT