Saturday , January 20 2018
Home / عرب دنیا / یہودی آباد کار کی کار نذرآتش، فلسطینی گاؤں میں اسرائیل کا کرفیو

یہودی آباد کار کی کار نذرآتش، فلسطینی گاؤں میں اسرائیل کا کرفیو

اسرائیلی فوج کی 40 گشتی پارٹیاں تعینات ۔ تمام بازار فوجیوں نے بندوق کی نوک پر بند کرا دیئے

اسرائیلی فوج کی 40 گشتی پارٹیاں تعینات ۔ تمام بازار فوجیوں نے بندوق کی نوک پر بند کرا دیئے
نابلس، 20 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شہر نابلس میں حوارہ کے مقام پر فلسطینی شہریوں نے ایک یہودی آباد کار کی کار کو آگ لگادی جس کے نتیجے میں کار جل کرخاکستر ہوگئی۔ واقعے کے بعد صیہونی فوج نے حوارہ کے تمام راستوں کی ناکہ بندی کے بعد گاؤں میں کرفیو لگا دیا ہے۔ مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق نابلس کے جنوبی قصبہ حوارہ سے ایک مقامی ذریعے نے بتایا کہ مقامی فلسطینی شہریوں نے ’’یستھار‘‘ چوک پر ایک یہودی آباد کار کی گاڑی پرحملہ کیا جس کے بعد یہودی بھاگ گیا اور فلسطینیوں نے اس کی گاڑی کو آگ لگا دی۔ عینی شاہدین نے بتایا کہ فلسطینی مزاحمت کاروں نے یہودی آباد کار کی کار پر پتھراؤ کیا جس کے نتیجے میں اس کے شیشے ٹوٹ گئے۔ بعدازاں اسے آگ لگا کر جلا دیا گیا۔ اس واقعے کے فوری بعد اسرائیلی فوج نے حوارہ کی مکمل ناکہ بندی کرکے شہریوں کو گھروں سے نکلنے سے روک دیا۔ ایک مقامی فلسطینی نادرعصفور نے بتایا کہ یہودی آباد کار کی گاڑی جلائے جانے کے بعد حوارہ قصبے میںکم سے کم اسرائیلی فوج کی 40 گشتی پارٹیاں مختلف مقامات پرتعینات کردی ہیں۔ صیہونی فوجیوں نے بندوق کی نوک پرتمام بازار بند کرا دیئے اور شہریوں کے گھروں سے نکلنے پر پابندی عاید کردی۔ انہوں نے بتایا کہ صیہونی فوجی راہ گیروں کی بھی جامہ تلاشی لیتے اور ان کی شناخت پریڈ کرتے رہے۔

TOPPOPULARRECENT