Tuesday , December 11 2018

۔12 فیصد تحفظات کیلئیبے تکان و بے لوث جدوجہد ضروری

سنگاریڈی میں پیدل یاترا کی اختتامی تقریب ‘نیوز ایڈیٹر سیاست عامر علی خاں کا خطاب

سنگاریڈی /12 ڈسمبر (سیاست نیوز) مانگنے سے بھیک ملتی ہے حق نہیں ‘حق حاصل کرنے جدوجہد کرنی پڑتی ہے ۔ 12 فیصد تحفظات مسلمانوں کا دستوری حق ہے اور اس کو حاصل کرنے مسلمانان تلنگانہ کو بے لوث و بے تکان جدوجہد کی ضرورت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار تلنگانہ 12 فیصد مسلم تحفظات تحریک کے روح رواں جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر سیاست نے آج سنگاریڈی کلکٹریٹ کے روبرو ویلفیر پارٹی آف انڈیا ظہیرآباد یونٹ کی جانب سے 12 فیصد مسلم تحفظات کی عمل آوری کے مطالبہ پر ظہیرآباد تا کلکٹریٹ سنگاریڈی منظم کردہ پیدل یاترا کی اختتامی تقریب سے خطاب میں کیا ۔ جناب عامر علی خاں نے ویلفیر پارٹی ظہیرآباد یونٹ کو مبارکباد پیش کی اور کہا کہ تلنگانہ بھر میں مسلمان حقوق حاصل کرنے آگے آئیں اور ضرورت پیش ہو تو تحریک چلائیں ۔ مسلمانان تلنگانہ کو 12 فیصد تحفظات کی فراہمی کی ٹی آر ایس نے وعدہ کیا اور اس کو وعدہ پورا کرنا چاہئیے ۔ حکومت نے ریاست میں ایک لاکھ سے زائد سرکاری ملازمتوں پر بھرتی کا اعلان کرکے پبلک سرویس کمیشن کے ذریعہ تقررات کرنا شروع کیا ہے ۔ اس کارروائی سے مسلمانوں کا ناقابل تلافی نقصان ہورہا ہے ۔ ریاست میں 12 فیصد مسلم تحفظات کی عمل آوری ہو تو ایک لاکھ جائیدادوں میں سے 12 ہزار جائیدادوں پر مسلم نوجوانوں کا تقرر ہوسکتا ہے ۔ یعنی 12 ہزار مسلم خاندانوں کو فائدہ ہوگا ۔ تلنگانہ میں 5 لاکھ مسلم خاندان ہیں اور 12 فیصد مسلم تحفظات پر عمل آوری ہو تو ہر سال ایک لاکھ مسلم خاندانوں کو تعلیم اور روزگار کے میدان میں فائدہ ہوگا یعنی اندرون 5 سال تلنگانہ میں ہر مسلم خاندان کو 12 فیصد تحفظات سے فائدہ ہوگا ۔ مسلمانوں کو اگر حقیقی فائدہ پہنچانے کی نیت ہے تو 12 فیصد تحفظات کی فراہمی کا صحیح وقت یہی ہے ۔ انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ مسلم تحفظات پر اسمبلی قرارداد پر مرکز کو جلد فیصلہ کیلئے دباؤ ڈالے ورنہ ریاستی حکومت کا اقدام غیر سنجیدہ تصور کیا جائے گا ۔ مسلمانان تلنگانہ بھی 12 فیصد مسلم تحفظات کیلئے حکومت پر دباؤ بنائیں ۔ کمال اطہر ریاستی صدر ویلفیر پارٹی نے کہا کہ 12 فیصد تحفظات کا مطالبہ مسلمانوں نے نہیں کیا بلکہ خود صدر ٹی آر ایس پارٹی اور کے چندر شیکھر راؤ نے 2014 انتخابات سے قبل اپنی جانب سے وعدہ کیا اور انتخابی منشور میں اس کو شامل کیا ۔ انتخابی جلسہ میں اعلان کیا تھا کہ ٹی آر ایس برسراقتدار آنے پر اندرون 4 ماہ مسلم تحفظات فراہم کئے جائیں گے ۔ 4 ماہ کا وعدہ 40 ماہ بعد بھی وفاء نہیں ہوسکا ۔ حافظ محمد ارشاد صدر ویلفیر پارٹی ظہیرآباد یونٹ جن کی قیادت میں 12 فیصد مسلم تحفظات پیدل یاترا ظہیرآباد تا سنگاریڈی منظم کی گئی نے کہا کہ مسلمانان تلنگانہ کا ایک ہی نعرہ ہے کہ حکومت وعدہ پورا کرے اور فوری 12 فیصد تحفظات فراہم کرے ۔ ظہیرآباد تا سنگاریڈی 55 کیلو میٹر پیدل سفر کا مقصد حکومت کو اس مسئلہ پر جذبات اور ناراضگی سے واقف کروانا ہے تو دوسری جانب عوام میں اپنے حقوق کیلئے جدوجہد و شعور بیداری ہے ۔ انہوں نے ادارہ سیاست اور جناب عامر علی خاں کی ستائش کی اور کہا کہ 12 فیصد تحفظات مسئلہ پر بہترین و کامیابی شعور بیداری تحریک منظم کی ہے ۔ اس موقع پر ویلفیر پارٹی ظہیرآباد اور سنگاریڈی کے عہدیداران و کارکنان کے علاوہ محمد اشفاق پٹیل صدر خدمت بینک سداسیو پیٹ ، سید یزدانی صدر این ایچ ایف سداسیو پیٹ ، معراج خاں ہاشمی قائد کانگریس ، محمد جاوید ، عبدالرافع ، محمد وہاب ، محمد مدبر الدین فہد اور دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT