Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / ۔125 کروڑ عوام کی خدمت ہی خدا کی صحیح خدمت‘

۔125 کروڑ عوام کی خدمت ہی خدا کی صحیح خدمت‘

2013ء میں کیدارناتھ کی تعمیرنو کی پیشکش مسترد کی گئی تھی لیکن لارڈ شیوا نے موقع دیا، مودی کا خطاب

کیدارناتھ (اتراکھنڈ) ۔ 20 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم مودی نے آج یہاں پانچ پراجکٹوں کی دوبارہ تعمیر کیلئے سنگ بنیاد رکھا اور کانگریس پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جب وہ گجرات کے چیف منسٹر تھے، 2013ء کے سیلاب کی بدترین تباہ کاریوں کے بعد یہاں دوبارہ تعمیر و ترقی کے کام شروع کرنا چاہتے تھے لیکن اس وقت کانگریس کی حکومت نے انہیں اجازت نہیں دی تھی۔ مودی نے کیدارناتھ مندر کے موسم سرما کے موقع پر بند ہونے سے دو دن قبل پوجا کی اور کہا کہ ہمالیائی علاقہ میں واقع اس مندر کے درشن کے بعد قوم کی خدمت کیلئے ان کا عزم اور عہد مستحکم ہوا ہے۔ پہاڑی چوٹی پر واقع لارڈ شیوا کے مندر میں حاضری کے بعد وزیراعظم نے کہا کہ عوام کی خدمت ہی لارڈ (شیوا) کی صحیح خدمت ہے۔ مودی نے کہاکہ 2013ء کے المیہ میں ہزاروں افراد کی ہلاکت کے بعد انہوں نے گجرات کے چیف منسٹر کی حیثیت سے مندر اور اس کے اطراف و اکناف کے علاقوں میں دوبارہ تعمیر و ترقی کی ذمہ داری لینے کی پیشکش کی تھی۔ مودی نے یاد دلایا کہ مختلف ریاستوں کے عوام فوت ہوچکے تھے اور اس سنگین المیہ کے بعد وہ (مودی) اس ریاست کو پہنچنے سے خود کو روک نہیں سکے تھے۔ مودی نے کہا کہ انہوں نے دوبارہ تعمیر کی پیشکش کی تھی لیکن اس وقت کے چیف منسٹر نے یہ کہتے ہوئے ان کی پیشکش کو ٹھکرا دیا تھا کہ حکومت گجرات کی مدد کی ضرورت نہیں ہے۔ مودی نے کہا کہ ’’میں مایوسی کی حالت میں واپس چلا گیا تھا‘‘ لیکن بابا (لارڈ شیوا) نے غالباً بابا کے بیٹے (خود مودی) کو دوبارہ تعمیر کی ذمہ داری دینے کا فیصلہ کرلیا تھا‘‘۔ مودی نے کہا کہ اس وقت کے چیف منسٹر وجئے بہوگنا کانگریس کے ساتھ تھے، لیکن اب بی جے پی کے ساتھ ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ ’’کیدارناتھ کا آشیرواد ہمیں 2022ء میں ہر ہندوستانی شہری کی امنگوں کی تکمیل کیلئے رہنمائی کرے گا۔ مودی سیاست میں داخل ہونے سے قبل کیدارناتھ کے قریب گرورچھتی میں گذرے ہوئے اپنے پرانے دنوں کی یاد میں کھو گئے۔ انہوں نے کہا کہ ’’میرے چند دوستوں سے آج یہاں میں نے ملاقات کی جنہوں (پرانے ساتھیوں) نے گرور چھتی میں میرے گذرے ہوئے دنوں کو یاد دلایا۔ وہ میری زندگی کے اہم لمحات تھے۔ میں اس سرزمین پر مستقل طور پر بس جانا چاہتا تھا اور بابا کے قدموں میں زندگی گذار دنا چاہتا تھا لیکن بابا کی مرضی کچھ اور تھی۔ غالباً وہ نہیں چاہتے تھے کہ میں صرف ایک بابا کے قدموں تلے اپنی زندگی گذار دوں اور انہوں نے مجھے ملک کے 125 کروڑ عوام کی خدمت کیلئے بھیج دیا کیونکہ عوام کی خدمت ہی خدا کی سچی خدمت ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT