Tuesday , October 16 2018
Home / شہر کی خبریں / ۔2 جی اسپکٹرم اسکام پر عدالتی فیصلہ سے تمل ناڈو میں نئی سیاسی صف بندی

۔2 جی اسپکٹرم اسکام پر عدالتی فیصلہ سے تمل ناڈو میں نئی سیاسی صف بندی

بی جے پی میں عنقریب سیاسی بھونچال ، ڈی ایم کے اور بی جے پی میں اتحاد کے آثار
حیدرآباد۔21ڈسمبر(سیاست نیوز) 2Gاسپکٹرم اسکام میں آنے والے عدالتی فیصلہ سے تمل ناڈو کی سیاست میں نئی صف بندیوں کے امکانات پیدا ہونے لگے ہیں اور کہا جا رہا ہے کہ گذشتہ ایک برس سے جاری تمل ناڈو میں سیاسی تماشہ اب ختم ہوجائے گا۔ جئے للیتا کی موت کے بعد تمل ناڈو میں جاری سیاسی رسہ کشی کے دوران بھارتیہ جنتا پارٹی نے ریاست میں اپنا وجود پیدا کرنے کی کوشش کی لیکن تاحال کوئی خاطر خواہ کامیابی حاصل نہیں ہو پائی ہے لیکن اب جبکہ وزیر اعظم نریندر مودی کی سابق چیف منسٹر مسٹر کروناندھی سے ملاقات کے کچھ دنو ںمیں ڈی ایم کے قائدین کو 2G اسکام میں کلین چٹ ملنا اس بات کی سمت اشارہ دیتا ہے کہ ریاست تمل ناڈو میں بھارتیہ جنتا پارٹی بہت بڑا سیاسی بھونچال پیدا کرنے کی سمت گامزن ہے اور جنوبی ہند میں بھارتیہ جنتا پارٹی کو مستحکم کرنے کیلئے ڈی ایم کے اور بھارتیہ جنتا پارٹی کے درمیان انتخابی مفاہمت کے امکانات بھی پیدا ہو چکے ہیں کیونکہ ڈی ایم کے کو بھارتیہ جنتا پارٹی 2G معاملہ میں ہی نشانہ بناتی رہی ہے لیکن اب جبکہ ڈی ایم کے قائدین کو کلین چٹ حاصل ہو چکی ہے تو ایسی صورت میں بھارتیہ جنتا پارٹی ڈی ایم کو گلے لگاتے ہوئے تمل ناڈو کا اقتدار ڈی ایم کے کے حوالے کرسکتی ہے۔سیاسی ماہرین 2G معاملہ میں اسپیشل کورٹ کے فیصلہ کو کانگریس کے لئے فائدہ مند بتانے کی کوشش قرار دینے میں مصروف ہیں لیکن اگر اسی دوران اگر بھارتیہ جنتا پارٹی اور ڈی ایم کے دونوں سیاسی جماعتوں میں اتحاد ہوجاتا ہے تو ایسی صور ت میں ایک اور ریاست کانگریس یا مخالف بھارتیہ جنتا پارٹی سیاسی قوتوں کے گروہ سے نکل کر بھارتیہ جنتا پارٹی کی حلیف سیاسی جماعت کے حق میں جا سکتا ہے ۔ ملک میں فی الحال 7ایسی ریاستیں جو بھارتیہ جنتا پارٹی کے راست یا بالواسطہ زیر اقتدار نہیں ہیں۔ ان میں تلنگانہ ‘ کیرالا‘ اڈیشہ‘ مغربی بنگال‘ تمل ناڈو‘ پوڈیچری اور تریپورہ شامل ہیں۔اس کے علاوہ 4 ریاستیں جہاں کانگریس کو اقتدار حاصل ہے ان میں پنجاب ‘ کرناٹک ‘ میگھالیہ اور میزورم شامل ہیں۔ جنوبی ہند کی اہم ریاستوں میں بھارتیہ جنتا پارٹی کیلئے کرناٹک‘ تلنگانہ اور تمل ناڈو انتہائی اہمیت کی حامل ریاستیں ہیں اور 2G اسکام کے فیصلہ کے بعد ایسا لگ رہا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی قائدین ڈی ایم سے قربت اختیار کرتے ہوئے تمل ناڈو پر بالواسطہ قبضہ حاصل کرلیں گے اور اس طرح بھارتیہ جنتا پارٹی کرناٹک انتخابات سے قبل جنوبی ہند کی ریاست میں اپنا وجود پیدا کرنے میں کامیاب ہونے کی ساز ش کرسکتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT