Saturday , May 26 2018
Home / کھیل کی خبریں / ۔2 روسی ایتھلیٹس کے گولڈ میڈلس واپس

۔2 روسی ایتھلیٹس کے گولڈ میڈلس واپس

لوزانے ۔29 نومبر (سیاست ڈاٹ کام ) سوچی ونٹر گیمز میں شریک مزید 2 روسی ایتھلیٹس سے جیتے گئے گولڈ میڈلس واپس لے لیے گئے۔روسی ایتھلیٹس سے جیتے گئے واپس لینے کا اس کا اعلان انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی ( آئی او سی ) نے کیا۔ ان پر بھی دیگر ہموطن کھلاڑیوں کی طرح ڈوپنگ کا الزام عائد تھا۔ الیکسائی نیگاڈیلو اور دیمیتری ترونیکوف بھی اسی چار رکنی بوبسلیکگ ٹیم کا حصہ تھے، جس نے روسی پرچم گلے گیمز میں حصہ لیا تھا، اس سے قبل اسی ٹیم کے ایک اور رکن الیگزینڈر زوبکوف سے بھی میڈل واپس لیاگیا تھا۔آئی او سی نے اس کے علاوہ روس سے ٹیمخطاب بھی واپس چھین لیا، یہ فیصلے آئی او سی کمیشن کی سماعت کے بعد سامنے آئے جس میں روس کے سرکاری سرپرستی میں ڈوپنگ چلانے کے معاملے کے الزامات زیر غور ہیں، روس نے 2014 میں ونٹر گیمز کی میزبانی اپنے شہر سوچی میں کی تھی۔اس کے علاوہ انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی نے یانا رومانووا اوراولگا ویلوکینا کو بھی تمام ایونٹس سے محروم کیے جانے کا بھی اعلان کردیا،انھوں نے بھی سوچی گیمز میں سلور میڈل حاصل کیا تھا، ویلوکینا نے ویمنز 7.5 کلو میٹر بائتھلون ایونٹ میں سلور اپنے نام کیا تھا، ان کے علاوہ مینز انفرادی اسکلیٹون میں پانچویں مقام کے حامل سرگئی چوڈینوف کو بھی ڈوپنگ خلاف ورزی پرنااہل قرار دینے کا اعلان کیاگیا ہے، یہ تمام پانچوں ایتھلیٹس مستقبل میں کسی بھی ونٹر اولمپکس میں بھی شرکت نہیں کرپائیں گے۔آئی او سی کا اہم ترین اجلاس 5 تا 7 دسمبر ہے، اس میں بھی مجموعی طور پر روس کی پیانگ چانگ ونٹر گیمز 2018 میں شرکت پر فیصلہ متوقع ہے لیکن اس سے ایک ہفتے قبل آئی او سی نے پانچویں روسی ایتھلیٹس پر پابندی عائد کردی ہے۔دوسری جانب روسیعہدیدار نے کہا ہیکہ وہ ان فیصلوںکیخلاف آئی او سی کیخلاف قانونی چارہ جوئی کریں گے، اب تک ہونے والی آئی او سی تحقیقات کے نتیجہ میں روس 11 میڈلز کھوچکا ہے، اس طرح وہ سوچی ونٹرگیمز میں اپنا پہلا مقام بھی کھوچکا ہے، اب یہ اعزاز ناروے کو مل گیا ہے جو 11 گولڈ میڈلز کے ساتھ سرفہرست ہے۔واضح رہے کہ روس پر نومبر2015 سے انٹرنیشنل ایتھلیٹکس نے پابندی عائد کررکھی ہے، اسی وجہ سے ان کے ایتھلیٹس ریو اولمپکس 2016 میں بھی شرکت نہیں کرپائے تھے جبکہ رواں برس لندن میں منعقدہ چیمپئن شپ میں بھی روسی ایتھلیٹس حصہ نہیں لے پائے تھے۔

 

لی چانگ نے
ہانگ کانگ خطاب جیت لیا
ہانگ کانگ ۔29 نومبر (سیاست ڈاٹ کام )ملائشیائی بیڈمنٹن اسٹار اور سابق عالمی نمبر ایک لی چانگ وائی نے ہانگ کانگ اوپن بیڈمنٹن ٹورنمنٹ مینز سنگلز خطاب اپنے نام کر لیا، انہوں نے فیصلہ کن مقابلہ میں اولمپک چیمپئن چن لانگ کو شکست دی۔ ٹورنمنٹ کے مینز سنگلز ایونٹ کے فائنل میں لی چانگ وائی نے عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے حریف چینی کھلاڑی چن لانگ کو 21-14 اور 21-19 سے شکست دیکر کے خطاب حاصل کیا۔ واضح رہے کہ عالمی نمبر بیاڈمنٹن کھلاڑی لی چانگ وائی کے حالیہ دنوں میں مظاہرے انتہائی مایوس کن تھے جس کے بعد سبکدوشی خدشہ بھی ظاہر کیا جارہا تھا۔

TOPPOPULARRECENT