Thursday , December 14 2017
Home / سیاسیات / ۔2014 ء میں مودی کی کامیابی میں راہول کا 50 فیصد کریڈٹ

۔2014 ء میں مودی کی کامیابی میں راہول کا 50 فیصد کریڈٹ

گجرات میں بی جے پی کی شکست کے آثار: راج ٹھاکرے

تھانے ۔ /28 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) مہاراشٹرا نونرمان سینا (ایم این ایس) کے سربراہ راج ٹھاکرے نے آج کہا کہ گزشتہ لوک سبھا انتخابات میں وزیراعظم نریندر مودی کی کامیابی کا آدھار کریڈٹ راہول گاندھی کو جاتا ہے ۔ کیونکہ اس وقت کے چیف منسٹر گجرات کے خلاف ان (راہول) کا مذاق ووٹروں میں بہتر انداز میں اپنا کام نہیں کردکھا پایا تھا ۔ تاہم ٹھاکرے نے کہا کہ موجودہ رجحانات اور اطلاعات یہ اشارہ کررہے ہیں کہ حکمراں بی جے پی کو گجرات اسمبلی کے انتخابات میں شکست ہوگی ۔ راج ٹھاکرے نے گزشتہ شب کلیان میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ’’2014 ء کے عام انتخابات میں نریندر مودی کی کامیابی کا 50 فیصد کریڈٹ کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی کو جاتا ہے ۔ کیونکہ مہم کے دوران انہوں نے (راہول) نے جس انداز میں مودی کا مضحکہ اڑایا تھا وہ موخرالذکر کی انتخابی جیت میں مددگار ثابت ہوا ‘‘ ۔ ماباقی 50 فیصد کے منجملہ 15 فیصد کریڈٹ سوشیل میڈیا کو جاتا ہے ۔ آر ایس ایس اور بی جے پی ورکروں کو بمشکل 10 تا 20 فیصد کریڈٹ گیا تھا اور باقی جو تھا وہ مودی کا شخصیاتی کرشمہ تھا ۔ راج ٹھاکرے کے ان ریمارکس سے قبل شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ سنجے راوت نے کہا تھا کہ راہول گاندھی ملک کی قیادت کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اور ’’مودی لہر ‘‘ اب ماند پڑچکی ہے ۔ راج ٹھاکرے نے کہا کہ ’’مودی کے جلسوں کے بعض ویڈیو کلپس گشت کررہے ہیں جن میں دکھایا گیا ہے کہ ان (مودی) کے خطاب کے دوران عوام گروپوں کی شکل میں جلسہ گاہ سے واپس لوٹ رہے تھے ۔ ماضی میں ایسا کبھی نہیں دیکھا گیا تھا اور اس سے ایک کوئی بھی صحیح پیغام اخذ کرسکتا ہے ‘‘۔

TOPPOPULARRECENT