۔2019ء انتخابات ،پارٹی کا استحکام اولین ترجیح : اکھیلیش یادو

لکھنؤ۔ 9 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) سماج وادی پارٹی سربراہ اکھیلیش یادو نے آج کہا کہ 2019ء کے عام انتخابات میں کسی سیاسی جماعت سے اتحاد کے بجائے فی الحال ان کی ترجیح اپنی پارٹی کو استحکام بخشنا ہے۔ پی ٹی آئی کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ اس وقت کسی جماعت کے ساتھ اتحاد کی بات کرنا فضول ہے اور وہ اسے وقت کو ضائع کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اتحاد کے عمل میں نشستوں کی تقسیم اور مطلوبہ کام کے حوالے سے گفت و شنید کے لئے اب وقت نہیں ہے چونکہ 2019ء کے عام انتخابات انتہائی اہم ترین انتخابات ہوں گے اور میں اس وقت اپنی پارٹی کو مستحکم کرنے میں مصروف ہوں۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ 2017ء کے اسمبلی الیکشن میں انہوں نے کانگریس کے ساتھ اتحاد کیا تھا ، آیا کیا وہ 2019ء میں بھی اسی طرح کے سیاسی اتحاد پر غور کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت ان کے پاس فرصت تھی تاہم ابھی وہ اس بارے میں نہیں سوچ رہے ہیں۔ واضح رہے کہ 2017ء میں ایس پی اور کانگریس نے اتحاد کرتے ہوئے یو پی کا اسمبلی الیکشن لڑا تھا تاہم مذکورہ اتحاد کو محض54 نشستیں ہی حاصل ہوسکی تھی جس میں 47 نشستیں سماج وادی پارٹی نے جیتی تھی جبکہ کانگریس کے حصہ میں صرف 7 نشستیں ہی آئی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT