Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / ۔21 اگست کا مکمل سورج گہن امریکیوں کیلئے بدشگون کی علامت

۔21 اگست کا مکمل سورج گہن امریکیوں کیلئے بدشگون کی علامت

کرۂ ارض کی عنقریب تباہی کی منادی، نادر فلکیاتی نظارہ، سازشی منطق کے ناطقوں میں تجسس

نیویارک ۔ 11 اگست (سیاست ڈاٹ کام) مکمل سورج گہن 99 سال کے وقفہ کے بعد اس سال 21 اگست کو دنیا بھر میں دیکھا جائے گا اور شائقین اس نادر فلکیاتی نظارہ کا بے چینی سے انتظار کررہے ہیں۔ قبل ازیں 1918 میں مکمل سورج گہن کے نادر فلکیاتی منطر کا مشاہدہ کیا گیا تھا لیکن بالخصوص امریکہ اور یوروپ میں اس نادر فلکیاتی واقعہ کو دنیا کے جلد خاتمہ کا موجب بدشگون بھی سمجھا جارہا ہے۔ اکثر ماہرین کا خیال ہیکہ اس مکمل سورج گہن کے بعد ایک بری خبر آئے گی۔ اس بری خبر کو امریکی و یوروپی اصطلاح میں ’’یوحنا کو جزیرہ بتموس میں ہوئے الہام‘‘ سے تعبیر کیا جارہا ہے۔ سازشی منطق کے مطابق ’’عظیم امریکی مکمل سورج گہن‘‘ کے بعد اجنبی سیارہ ’نبیرو‘ کے سیاسی و سماجی انقلاب کے اثرات سے کرۂ ارض تباہ ہوجائے گا۔ نبیرو ایک خیالی سیارہ ہے جس کا سائنسدانوں نے ہنوز مشاہدہ نہیں کیا ہے لیکن روسی نژاد امریکی مصنف اور عیسائی ماہر علم جفرونجوم سچن ذکریا نے اس سیارہ کے وجود کا اشارہ دیا تھا۔ یہ خیالی دیوہیکل نبیرو سیارہ ماہر علم جفر کے مطابق کئی چاندوں میں گھرا ہوا ہے جو امریکہ بھر میں عوام کی آنکھوں کے علاج کا سبب بننے والے ایک مکمل سورج گہن کے بعد کرۂ ارض سے ٹکرائے گا جس کے نتیجہ میں ساری دنیا تباہ ہوجائے گی۔ ایسی ہی سازشی منطق کے ایک اور ناطق ڈیوڈ میڈ نے قبل ازیں اکتوبر میں دنیا کی تباہی کا شگون دیا تھا لیکن بعد تاریخ بدلتے ہوئے اگست میں یہ واقعہ رونما ہونے کی پیش قیاسی کی۔ میڈ کے مطابق مکمل سورج گہن اس بات کی علامت ہے کہ دنیا اپنے خاتمہ کے قریب پہنچ رہی ہے۔ ذیلی اسٹار نے ان کے حوالہ سے لکھا کہ ’’21 اگست کا عظیم امریکی سورج گہن اس بدشگون واقعہ کی خطرناک منادی ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT