Monday , November 20 2017
Home / Top Stories / ۔4 لاکھ روہنگیا پناہ گزینوں کیلئے 14 ہزار شیلٹرس

۔4 لاکھ روہنگیا پناہ گزینوں کیلئے 14 ہزار شیلٹرس

کاکسیس بازار ۔ /16 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش کے ایک سینئر عہدیدار نے آج کہا کہ سڑکوں کے کنارے ، پہاڑیوں اور جنگلات میں موجود لاکھوں روہنگیا مسلم پناہ گزینوں کو رہائش کی سہولت کی فراہمی کیلئے بنگلہ دیش کی طرف سے 14,000 شیلٹرس تعمیر کئے جائیں گے ۔ روہنگیا مسلم عسکریت پسندوں کے مبینہ حملہ کے جواب میں مائنمار فوج کی طرف سے کی گئی کارروائیوں کے نتیجہ میں /25 اگست کے بعد لاکھوں روہنگیا مسلمان اپنی جان بچانے کے لئے مائنمار سے فرار ہوکر بنگلہ دیش پہونچے ہیں۔ اقوام متحدہ کے مطابق اواخر اگست سے تاحال 400000 روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش پہونچ گئے ہیں ۔ حکام نے کہا ہے کہ مائنمار سرحد سے متصلہ بنگلہ دیش ضلع کاکسیس بازار کے کٹوپالانگ میں پہلے سے موجود روہنگیا پناہ گزین کیمپ کے قریب 2000 ایکر اراضی پر ایک بڑا پناہ گزیں کیمپ بنایا جائے گا ۔ بنگلہ دیش میں ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے سکریٹری شاہ کمال نے کہا کہ ’’حکومت نے 400,000 روہنگیا مسلمانوں کے لئے 14000 شلٹرس بنانے کا فیصلہ کیا ہے ‘‘ ۔ انہوں نے کہا کہ ’’ہم سے کہا گیا ہے کہ اندرون 10 دن شیلٹرستعمیر کئے جائیں ۔ ہر ایک شیلٹر میں چھ پناہ گزیں خاندانوں کو ٹھہرایا جائے گا ۔ ان کیمپوں کو باضابطہ صحت و صفائی پانی اور ادویات جیسی تمام بنیادی سہولتیں فراہم کی جائیں گی ۔

امداد کی تقسیم کے دوران بھگدڑ ، 3 ہلاک
بنگلہ دیش کے پناہ گزیں کیمپ میں امداد کے لیے بھگدڑ کے دوران تین افراد بشمول دو بچے اور ایک خاتون ہلاک ہوگئے ۔ اقوام متحدہ ایجنسیوں کے بموجب ریلیف ٹرکس کے ذریعہ غذا اور کپڑے پھینکے جارہے تھے جسے حاصل کرنے کی کوشش میں بھگدڑ مچ گئی ۔ ریلیف کی تقسیم کے لیے قواعد اور کنٹرول روم موجود ہونے کے باوجود خانگی سطح پر راحت کاری اشیاء کی تقسیم کا سلسلہ یہاں جاری ہے ۔ اس دوران وزیراعظم بنگلہ دیش شیخ حسینہ واجد آج اقوام متحدہ جنرل اسمبلی اجلاس کے لیے روانہ ہوگئیں جہاں وہ روہنگیا بحران کی سمت عالمی توجہ مبذول کراتے ہوئے حالات سے نمٹنے میں مدد کی خواہش کریں گی ۔ میانمار سے نقل مقام کرنے والوں کی تعداد یہاں چار لاکھ سے متجاوز ہوگئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT