Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ۔4 ہزار اسکولس بند کرنے کا فیصلہ واپس لیا جائے، حکومت پر خانگی اسکولس کی حوصلہ افزائی کا الزام

۔4 ہزار اسکولس بند کرنے کا فیصلہ واپس لیا جائے، حکومت پر خانگی اسکولس کی حوصلہ افزائی کا الزام

حیدرآباد ۔ 4 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : تعلیم بچاؤ کمیٹی نے تلنگانہ حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ تلنگانہ میں تقریبا چار ہزار 14 اسکولس کو بند کرنے کے اپنے فیصلہ سے دستبرداری اختیار کرے ۔ سندریا وگیان بھون میں تعلیم بچاؤ کمیٹی کے زیر اہتمام راونڈ ٹیبل کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کمیٹی کے صدر پروفیسر کے چکردھر راؤ نے کہا کہ اسکولس بند کرنے کا فیصلہ اچھی علامت نہیں ہے ۔ ریاست میں کوئی اسکول بند نہیں کیا جانا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری اسکولس کی حالت زار کے لیے حکومت ذمہ دار ہے ۔ بنیادی سہولتیں نہ ہونے اساتذہ کتب اور یونیفارمس کی کمی کی وجہ سے اسکولس کا معیار بدتر ہوچکا ہے ۔ حکومت کو چاہئے کہ اسکولی طلبہ کو تغذیہ بخش خوراک فراہم کرے ۔ انہوں نے تنقید کی کہ حکومت خانگی اسکولس کو خطیر ٹیوشن فیس وصول کرنے کی اجازت دے رہی ہے ۔ حکومت کو چاہئے کہ اسکولس فیس کو باقاعدہ بنانے انہوں نے اسکولی تعلیم کے بجٹ میں اضافہ کا بھی مطالبہ کیا ۔ تعلیم بچاؤ کمیٹی کے سکریٹری پروفیسر جی ہرگوپال نے بھی سرکاری اسکولس بند کرنے کے فیصلہ پر تنقید کی اور کہا کہ ایسا تمام ریاستوں میں ہورہا ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT