Friday , September 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ’یہ بھی ہے ایک معجزہ ان کا ، جس نے دیکھا ہوگیا ان کا ‘

’یہ بھی ہے ایک معجزہ ان کا ، جس نے دیکھا ہوگیا ان کا ‘

بیدر۔12؍مارچ۔(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)۔جامعہ روضۃ البنات بیدر شاخ جامعہ نظامیہ کے زیر اہتمام بضمن صد سالہ عرس عارف با اللہ شیخ طریقت رہبر شریعت شیخ الاسلام حضرت علامہ مولانا حافظ امام محمد انوار اللہ فاروقی فضیلت جنگ ؒبانی جامعہ نظامیہ حیدرآباد کے موقع پرمغل گارڈن فنکشن ہال بید رمیں کل ہند نعتیہ و منقبتی مشاعرہ کا کامیاب انعقاد عمل می

بیدر۔12؍مارچ۔(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)۔جامعہ روضۃ البنات بیدر شاخ جامعہ نظامیہ کے زیر اہتمام بضمن صد سالہ عرس عارف با اللہ شیخ طریقت رہبر شریعت شیخ الاسلام حضرت علامہ مولانا حافظ امام محمد انوار اللہ فاروقی فضیلت جنگ ؒبانی جامعہ نظامیہ حیدرآباد کے موقع پرمغل گارڈن فنکشن ہال بید رمیں کل ہند نعتیہ و منقبتی مشاعرہ کا کامیاب انعقاد عمل میں آیا ۔ جس کی نگرانی پیر طریقت سید شاہ پاشاہ حسین حسینی قادری چشتی بخاری المعروف پاشاہ حسینی سجادہ نشین آستانہ بخاریہ ہمناآباد نے کی ۔ الحاج محمد لئیق الدین ایڈوکیٹ سابق رکن اسمبلی صدر مشاعرہ ، جناب سید ذوالفقار سابق رکن اسمبلی ، مفتی سید سراج الدین کامل جامعہ نظامیہ نے حضرت شیخ الاسلام علامہ مولانا حافظ امام محمد انوار اللہ فاروقی فضیلت جنگ ؒبانی جامعہ نظامیہ حیدرآباد کی دینی ملی سیاسی انجام دی گئی خدمات کو زبر دست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے خطاب کیا۔ مشاعرہ کی کارروائی کا آغاز مسلم الدین انصاری کی قرأ ت کلام سے ہوا ۔جناب ارمان حسین فرشوری، محمد رفیق ، محمد شفیع الدین نے حمد ونعت اور منقبت سنانے کی سعادت حاصل کی۔شعراء مبین منور بنگلور ، ڈاکٹر محب کوثر ،اسلم فرشوری ، ڈاکٹر فاروق شکیل ، یوسف روش، شکیل حیدرکانپوری ، شاید عدیلی ، ڈاکٹر سید طیب پاشاہ قادری، حافظ و قاری واحد نظام آبادی، زاہد ہریانوی ، شاہنواز ہاشمی ، زبیر قمر دیگلور ، مقبول احمد مقبول اودگیر ، اکرم نقاش گلبرگہ، جمیل نظام آبادی ، سیف الدین سیف غوری، نثار احمد کلیم ، باسط خاں صوفی اور دیگر ممتاز شعراء کرام بارگاہ رسالت مآب ﷺ نعت رسول کا ہدیہ پیش کرنے کی سعادت حاصل کرتے ہوئے سامعین پر بے خودی کی کیفیت طاری کردی ۔ جناب محمد فراست علی ایڈوکیٹ نے استقبالیہ خطاب کیا ۔جناب اسلم فرشوری اور محمد عبدالصمد منجوالا نے بحسن خوبی نظامت کے فرائض انجام دئے۔ سامعین نے شعراء کرام کے ان شعروں کی زبردست داد دی ۔’’جوبصد شوق نبی ؐ کا رخ زیبا دیکھے۔ کسی لئے پھر وہ کسی اور کے چہرہ دیکھے، جس کو سرکارؐ دعالم کا سہارا ہونصیب ۔ وہ بھلا کس لئے اوروں کا سہارا دیکھے۔‘‘(مقبول احمد مقبول) ۔ ’’گزرے جتنے بھی دن رات ہیں ۔ باقی جتنے بھی دن رات ہیں ۔ جتنی دنیا کی تاریخ ہے اس کے جتنے بھی لمحات ہیں۔ میرے آقا سے اُتنے درود میرے آقاپہ اُتنے سلام ‘‘۔ (مبین منور بنگلور)ــ’’کملی والے آقاؐ سے رابطہ ضروری ہے۔ وقت کے اندھیروں میں اک دیا ضروری ہے‘‘۔ (ڈاکٹر طیب پاشاہ قادری )’’مقتدی ہم ہیں امام آپ ہیں شیخ الاسلام ۔ کچھ نہیں اس میں کلام آپ ہیں شیخ الاسلام ‘‘(واحد نظام آبادی)’’پائے اقدس پڑیں جس جگہ اُس جگہ ۔کم ہیں آنکھیں رکھوں دل رکھوں یا جبیں‘‘(اکرم نقاش)’’وہ یتیمی کے مقدر کو حرا کرتے ہیں ۔ ہاتھ جب سرپہ یتیموں کے رکھا کرتے ہیں‘‘۔(ڈاکٹر فاروق شکیل )۔’’شاہوں کے شاہ ہوکے بھی فاقوں میں کی بسر ۔ بے مثل ہے جہاں میں قناعت رسولؐ کی‘‘ ۔(زائد ہریانوی)۔’’وہ جن کو رب نے اپنے نو رکے سانچے میں ڈھالا ہے ۔انہیں کے نورسے سارے زمانے میں اُجالا ہے۔‘‘(جمیل نظام آبادی)’’محمد کے گھرانے کی فضیلت ہی فضیلت ہے ۔ کوئی سردار جنت کا کوئی خاتون جنت ہے‘‘(شائد عدیلی ) ۔’’نبی کے نور سے کونین میں اُجالا ہے ۔ نبی کے چاہنے والوں کا بو ل بالاہے۔‘‘(شاہنواز ہاشمی)ــ’’کم نصیبوں کو عجیب عالی مقدر کردیا۔ آپ نے بے قدرقطروں کوسمندرکردیا۔‘‘ (واحد نظام آبادی) یہ بھی ہے ایک معجزہ ان کا جس نے دیکھا ہوگیا ان کا ۔‘‘ (شکیل حیدر) ’’عشق سرور میں آنکھ روتی ہے ۔ قلب کی ظلمتوں کودھوتی ہے‘‘(یوسف روش)۔ ہم غریبوں کو بلائیں گے یقیناآقاؐ ۔ جھوم کر آج بھی آقا ؐ کا جو اُسوہ دیکھے۔‘‘ (ڈاکٹر زبیر قمر دیگلور)۔تمام مہمانوں کی بکثرت گلپوشی کی گئی۔ مشاعرے میں ضلع کے تمام تعلقہ جات سے عاشقانِ رسول ؐ کی کثیر تعداد دیکھی گئی ۔محمد کفایت اللہ صدیقی نے اظہار تشکرکیا ۔ سید پاشاہ حسین حسینی قادری چشتی بخاری نے رقت انگیز دعا فرمائی۔ مولانا سید سراج الدین نظامی ناظم جامعہ روضۃ البنات کی نگرانی میں سید سعود احمدقادری اور مختلف تنظیموںکے ذمہ داروں نے وسیع تر انتظامات میں حصہ لیا ۔

TOPPOPULARRECENT