Friday , June 22 2018
Home / سیاسیات / ’’اچھے دن کہاں ہیں‘‘شیو سینا کا حکومت سے سوال

’’اچھے دن کہاں ہیں‘‘شیو سینا کا حکومت سے سوال

مسافروں کے مصائب کا حوالہ ،کانگریس دور کی مشکلات کے تسلسل کی شکایت

مسافروں کے مصائب کا حوالہ ،کانگریس دور کی مشکلات کے تسلسل کی شکایت
ممبئی 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) مسافروں کی برہمی سے نمٹنے کے انداز پر عہدیداروں پر سخت تنقید کرتے ہوئے جو گذشتہ ہفتہ مضافاتی ٹرین خدمات کے بند ہوجانے پر پیدا ہوئی تھی،شیو سینا نے کہا کہ مرکزی حکومت نے ’’اچھے دن ‘‘ کا تیقن دیا تھا اور سوال کیا کہ عوام کو جن اچھے دنوں کا تیقن دیا گیا تھا وہ کہاں ہیں۔ شیو سینا کے ترجمان سامنا کے اداریہ میں تحریر کیا گیا ہے کہ یہ سچ ہے کہ (جمعہ کے دن )احتجاجی مظاہرے ہوئے تھے اور وہ بعدازاں پُر تشدد ہوگئے تھے لیکن نہ تو سیاستداں اور نہ عہدیدار اُن وجوہات کی تحقیقات کروانے کیلئے تیار ہیںجس کے نتیجہ میں عوام پرتشدد ہوگئے تھے۔ اگر ایسے ہی واقعات جو کانگریس دور اقتدار میں پیش آرہے تھے بلا رکاوٹ جاری رہیں تو کوئی بھی یہ سوال کرے گا کہ ’’اچھے دن ‘‘ کہاں ہیں وہ اس کا جواب چاہے گا۔ وہ (سیاسی پارٹیاں) جنہوں نے سمجھا تھا کہ قانون اپنے ہاتھ میں لیا جاسکتا ہے کیونکہ وہ برسر اقتدار نہیں ہے اور اس کے نتیجہ میں ان کی حکومت قائم ہوسکتی ہے ۔ اگر احتجاجی مظاہرے عوام کی انتظامیہ کے بارے میں مایوسی کا نتیجہ ہیں تو ہمیں یہ تیقن دینا چاہئے کہ یہ قانون اور نظم و نسق کے ناکام ہونے کی وجہ نہ بن جائے ۔ شیو سینا بی جے پی زیر اقتدار مخلوط حکومت میں مرکز اور ریاست مہاراشٹرا دونوں جگہ شامل ہیں ۔ اس کے ترجمان کے اداریہ میں کہا گیا ہے کہ مضافاتی ٹرین خدمات کے ناکام ہونے کے نتیجہ میں کئی افراد وقت پر اپنی ملازمتوں پر نہیں پہنچ سکے ۔ وہ پریشان ہوگئے تھے ۔ طلباء کو جنہیں امتحانات میں شریک ہونا تھا مضافاتی ٹرین خدمات کے ناکام ہوجانے کی وجہ سے مصیبتوں کا سامنا کرنا پڑا ۔ اداریہ میں کہا گیا ہے کہ کیا ریلوے کے کسی عہدیدار کوگرفتار کیا جائے گا ؟۔وزیر ریلوے سریش پربھو نے موبائیل ٹکٹ خدمت کا آغازکیا ہے لیکن اگر ٹرینیں ہی نہ چل رہی ہوں تو کون یہ ٹکٹ خریدے گا عوام میں برہمی پھیل جائے گی ۔جمعہ کو ممبئی میں معمولات زندگی چھ گھنٹوں سے زیادہ وقت کیلئے مفلوج ہوگئے تھے جبکہ برہم مسافروں نے دوا اسٹیشن پر احتجاج کیا تھا کیونکہ وقفہ وقفہ سے ٹرینیں تاخیر سے چل رہی تھی۔ احتجاجی مظاہرہ پُر تشدد ہوگیا ۔ مظاہرین نے سنگباری کی ،فسادات برپاکئے ،اسٹیشن میں اور اس کے باہر آتشزنی کی۔

TOPPOPULARRECENT