Saturday , September 22 2018
Home / سیاسیات / ’’بجٹ غریب دشمن اور مایوس کن ‘‘

’’بجٹ غریب دشمن اور مایوس کن ‘‘

نئی دہلی 10 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن پارٹیوں نے آج نریندر مودی کے اوّلین عام بجٹ کو ’’مایوس کن اور غریب دشمن‘‘ قرار دیتے ہوئے کہاکہ اِس سے صرف ’’امیر آدمیوں کو فائدہ‘‘ پہونچے گا۔ حالانکہ عوام کی توقعات کو کافی بڑھادیا گیا تھا۔ لیکن بی جے پی نے ’’موقع کھودیا‘‘۔ اپوزیشن نے کہاکہ اُنھوں نے یہ اندیشے ظاہر کرنا شروع کردیئے

نئی دہلی 10 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن پارٹیوں نے آج نریندر مودی کے اوّلین عام بجٹ کو ’’مایوس کن اور غریب دشمن‘‘ قرار دیتے ہوئے کہاکہ اِس سے صرف ’’امیر آدمیوں کو فائدہ‘‘ پہونچے گا۔ حالانکہ عوام کی توقعات کو کافی بڑھادیا گیا تھا۔ لیکن بی جے پی نے ’’موقع کھودیا‘‘۔ اپوزیشن نے کہاکہ اُنھوں نے یہ اندیشے ظاہر کرنا شروع کردیئے ہیں کہ ٹیکس سے استثنیٰ کی حد میں 50 ہزار روپئے کا اضافہ صرف ’’ناکافی‘‘ ہے۔ جبکہ افراط زر میں کافی اضافہ ہوچکا ہے۔ اِس بجٹ کا عام آدمی سے اور غریبوں سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ اُنھوں نے ٹیکس میں رعایتیں، کارپوریٹس اور بڑے صنعتی گھرانوں کو فائدہ پہنچانے کے لئے دی ہیں۔ لوک سبھا میں کانگریس کے قائد ملک ارجن کھرگے نے کہاکہ ایک طرف تو وہ لوگ سابق حکومت کے مقرر کردہ ٹیکس وصول کرنا جاری رکھیں گے، دوسری طرف اُنھوں نے بڑے صنعتی گھرانوں کو دباؤ کے تحت رعایتیں دی ہیں۔ کھرگے نے کہاکہ بجٹ میں کوئی فلاحی اسکیم کا تذکرہ نہیں ہے جیسے کہ دیہی روزگار طمانیت اسکیم۔ اُنھوں نے ٹیکس میں استثنیٰ سے صرف افراط زر میں اضافہ ہوگا۔ عام آدمی کی افراط زر میں اضافہ کے خلاف جنگ کو کوئی فائدہ نہیں پہونچے گا۔ این سی پی صدر سابق وزیر زراعت شرد پوار نے کہاکہ یہ انتہائی مایوس کن ہے، اعلانات کی برسات ہے، الفاظ کا مجمع ہے۔ ترقی کے انجمن کو ناکافی ایندھن سربراہ کیا گیا۔ بی جے ڈی قائد بیجناتھ پانڈا نے کہاکہ مرکزی وزیر فینانس نے موجودہ صورتحال کا اچھا سامنا کیا ہے۔ ترنمول کانگریس کی سربراہ ممتا بنرجی نے مرکزی بجٹ کو بے بصیرت، بے مقصد اور بے عمل قرار دیتے ہوئے کہاکہ نریندر مودی حکومت ایف ڈی آئی کی، ایف ڈی آئی کی جانب سے اور ایف ڈی آئی کے لئے ہے۔ اُنھوں نے فیس بُک پر شائع اپنے بیان میں کہاکہ عام آدمی کے نقطہ نظر سے یہ بجٹ غریبوں کی ترقی اور فروغ کو تحریک نہیں دے سکتا۔ اُنھوں نے کہاکہ طاقتور اور متحرک ہندوستان کے لئے حکومت نے قبل ازیں نعرہ دیا تھا لیکن برسر اقتدار آنے کے بعد کہا تھا کہ اچھی حکمرانی پیش کی جائے گی۔ اُنھوں نے طنزیہ انداز میں کہاکہ نئی حکومت نے صرف ایک مثبت مثال قائم کی ہے ۔ دونوں بجٹوں میں حکومت ایف ڈی آئی کی، ایف ڈی آئی کی جانب سے اور ایف ڈی آئی کیلئے ثابت ہوگئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT