Thursday , December 13 2018

’’برطانیہ میں شرعی قوانین کیلئے کوئی جگہ نہیں‘‘

تارکین وطن کیلئے برطانوی طرز زندگی کا احترام ضروری: پاکستانی نژاد وزیر

تارکین وطن کیلئے برطانوی طرز زندگی کا احترام ضروری: پاکستانی نژاد وزیر

لندن، 19 مئی (سیاست ڈاٹ کام) برطانیہ کے پاکستانی نژاد وزیر ثقافت ساجد جاوید نے کہا ہے کہ ترک وطن کر کے برطانیہ آنے والوں کیلئے انگریزی سیکھنا اور ہمارے طرز زندگی کا احترام ضروری ہے۔ ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ حد سے زیادہ مہاجرین کے برطانیہ آنے پر ووٹروں کی تشویش جائز ہے۔ ’’میں ذاتی طور پر ایسے لوگوں کو جانتا ہوں اور ایسے لوگوں سے ملا ہوں جو 50 سال سے بھی زیادہ عرصے سے برطانیہ میں رہ رہے ہیں اور وہ انگریزی نہیں بول سکتے‘‘۔ انہوں نے یہ باتیں اس وقت کہیں جب ایسی اطلاعات ہیں کہ لندن، برمنگھم، بریڈفورڈ اور مانچسٹر میں شرعی عدالت کا قیام عمل میں آیا ہے۔ انہوں نے کہا، ’’جہاں لوگ اپنے ذاتی معاملوں کا ذاتی طور پر انتظام کرنا چاہتے ہیں تو یہ ان کا معاملہ ہے لیکن برطانوی قانون میں شرعی قوانین کیلئے کوئی جگہ نہیں‘‘۔ جاوید نے برمنگھم کے سرکاری اسکولوں کو مسلم قدامت پرستوں کے ذریعے ’اسلامی‘ بنائے جانے کی مبینہ سازش پر بھی تشویش کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ تارکین وطن کی وسیع اکثریت برطانیہ کے باقی سماج سے ہم آہنگ ہونے کی خواہش رکھتی ہے۔ لیبر پارٹی کے رکن پارلیمان اور امور داخلہ کی مخصوص کمیٹی کے چیئرمین کیتھ ویز نے کہا کہ جاوید نے کوئی نئی بات نہیں کہی۔

TOPPOPULARRECENT