Wednesday , December 12 2018

’’برہنہ‘‘ عامرخان کو کپڑے پہنانے کا ممبئی میں انوکھا احتجاج

ممبئی ۔ 8 اگست (سیاست ڈاٹ کام) بالی ووڈ ایکٹر عامرخان جنہیں مسٹر پرفیکشنسٹ کہا جاتا ہے اور ان کی فلمیں بھی صاف ستھری ہوتی ہیں لیکن اپنی نئی فلم ’’پی کے‘‘ کی ریلیز سے قبل انہوں نے جو پوسٹر ریلیز کیا ہے اس نے تقریباً زندگی کے ہر شعبہ سے تعلق رکھنے والوں کو حیرت زدہ کردیا ہے۔ عامرخان پوسٹر میں ایک ریلوے لائن پر بالکل برہنہ کھڑے ہوئے ہی

ممبئی ۔ 8 اگست (سیاست ڈاٹ کام) بالی ووڈ ایکٹر عامرخان جنہیں مسٹر پرفیکشنسٹ کہا جاتا ہے اور ان کی فلمیں بھی صاف ستھری ہوتی ہیں لیکن اپنی نئی فلم ’’پی کے‘‘ کی ریلیز سے قبل انہوں نے جو پوسٹر ریلیز کیا ہے اس نے تقریباً زندگی کے ہر شعبہ سے تعلق رکھنے والوں کو حیرت زدہ کردیا ہے۔ عامرخان پوسٹر میں ایک ریلوے لائن پر بالکل برہنہ کھڑے ہوئے ہیں اور ایک اسٹیریو (ریڈیو یا ٹیپ ریکارڈر) سے اپنی ستر پوشی کئے ہوئے ہیں۔ دریں اثناء ممبئی میں کانگریس کے لیجسلیٹر نے بھی پوسٹر پر اپنی ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے اسے انتہائی ’’بیہودہ‘‘ قرار دیتے ہوئے عامر سے اس پوسٹر کو ہٹانے کی اپیل کی ہے۔

ولے پارلے ایم ایل اے کرشنا ہیگڈے نے کہا کہ وہ میڈیا کے ذریعہ عامر خان سے اپیل کرنا چاہتے ہیں کہ پی کے کا پوسٹر انتہائی بیہودہ ہے جو متعدد اخبارات میں شائع ہوچکا ہے اور سوشیل میڈیا میں بھی گشت کررہا ہے۔ ہم کل یہاں احتجاج کرنے والے ہیں جس کیلئے ہم نے ایک انوکھا طریقہ اختیار کیا ہے۔ ہم تمام بڑے بڑے پوسٹرس میں برہنہ عامر کو کپڑے پہنادیں گے۔ ہیگڈے نے ایک بار پھر کہا کہ عامرخان کو پوسٹر ہٹادینے چاہئے کیونکہ یہ بالغ اور بچوں دونوں پر منفی اثرات مرتب کررہا ہے۔ یاد رہے کہ کل عامرخان نے پوسٹر کا دفاع کرتے ہوئے کہا تھا کہ پوسٹر تشہیر کیلئے استعمال نہیں کیا جارہا ہے بلکہ اسے ’’کی آرٹ‘‘ بتاتے ہوئے عامرخان نے کہا تھا کہ پوسٹر کے ذریعہ فلم کی کہانی بتائی گئی ہے جس کا ردعمل مسٹر ہیگڈے کے بیان کی صورت میں سامنے آیا۔

TOPPOPULARRECENT