Friday , January 19 2018
Home / دنیا / ’’جہادی ‘‘شام اور امریکہ کے مشترکہ دشمن

’’جہادی ‘‘شام اور امریکہ کے مشترکہ دشمن

بیروت۔ 20 اگست (سیاست ڈاٹ کام) شام اور امریکہ ، داعش کے خلاف جنگ میں ایک دوسرے کے ساتھ ہیں، کیونکہ داعش کے جہادی ان کے مشترکہ دشمن ہیں، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ امریکہ اور شام میں راست تعاون ہے۔ امریکہ نے انتہا پسند گروپس کے خلاف جاریہ ماہ کے اوائل میں عراق میں فضائی حملے شروع کردیئے ہیں۔ حکومت شام نے بھی اپنی سرزمین پر جہادیوں کے خل

بیروت۔ 20 اگست (سیاست ڈاٹ کام) شام اور امریکہ ، داعش کے خلاف جنگ میں ایک دوسرے کے ساتھ ہیں، کیونکہ داعش کے جہادی ان کے مشترکہ دشمن ہیں، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ امریکہ اور شام میں راست تعاون ہے۔ امریکہ نے انتہا پسند گروپس کے خلاف جاریہ ماہ کے اوائل میں عراق میں فضائی حملے شروع کردیئے ہیں۔ حکومت شام نے بھی اپنی سرزمین پر جہادیوں کے خلاف جنگ میں شدت پیدا کردی ہے۔ لیکن شام ،امریکہ کی مخالف حکومت باغیوں کی تائید پر برہم ہیں ،جبکہ امریکہ نے شام پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ داعش کو پروان چڑھنے کا موقع دے رہا ہے اور اپنے مخالفین کو انتہا پسند قرار دیتا ہے۔ داعش نے کل ایک ویڈیو جاری کیا تھا جس میں ایک امریکی صحافی جیمس فولے کو سزائے موت دیتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔

وہ نومبر 2012ء سے شام سے لاپتہ ہوچکا تھا۔ داعش نے دھمکی دی ہے کہ وہ دوسرے نامہ نگار کو بھی قتل کردے گا، اگر امریکہ ، عراق میں فضائی حملے بند نہ کرے۔ حکومت شام، امریکی فضائی حملوں کو مشکوک نظر سے دیکھتی ہے۔ ان حملوں کا آغاز 8 اگست سے ہوا تھا۔ حکومت ِ شام کو فکر ہے کہ اس کے نتیجہ میں سرحد پر جہادیوں اور شامی فوج دونوں کے خلاف امریکی کارروائی کا آغاز ہوسکتا ہے۔ داعش پر حملہ کرتے ہوئے حکومت ِشام امریکیوں سے یہ کہتی آرہی ہے کہ اسے داعش کا مقابلہ کرنے کیلئے امریکی فضائیہ کی مدد کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ ودّا عابد رَبو ڈائریکٹر شامی حکومت حامی روزنامہ ’’الوطن‘‘ نے شائع کیا گیا ہے کہ امریکہ ہمارے مشیر کا کام گزشتہ 3 سال 6 ماہ سے کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

یہ ایک مثبت علامت ہے کہ اب امریکیوں کو احساس ہوچکا ہے کہ شام کے ساتھ تعاون ضروری ہے، لیکن شام ، امریکیوں سے سیاسی سطح پر کوئی تعاون صیانتی ہو یا فوجی کرنا نہیں چاہتا۔ جاریہ سال کے اوائل میں یوروپی محکمہ سراغ رسانی نے حکومت شام سے ربط پیدا کیا تھا۔ اسے شام سے یوروپی باشندوں کے فرار پر تشویش تھی جو داعش کی صفوں میں شامل ہوکر حکومت سے جنگ کررہے تھے، لیکن شامی عہدیداروں نے کہا کہ انہیں سیاسی سطح پر صیانتی مسائل میں تعاون حاصل کرنے میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ امریکہ نے حکومتِ شام سے ربط پیدا کرنے کی خبروں کی تردید کی ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ داعش، شام اور امریکہ دونوں کا مشترکہ دشمن ہے، لیکن دونوں میں تعاون نہیں ہے۔ محکمہ خارجہ امریکہ کی ترجمان ماری ہارف نے کہا کہ وہ سختی سے اس اطلاع کی تردید کرتی ہیں کہ شام اور امریکہ دونوں اس جنگ میں مساوی شراکت دار ہیں۔ اس نے کہا کہ حکومت امریکہ، حکومت شام کی مدد کرنا چاہتی ہے تاکہ وہ داعش سے شکست نہ کھائے۔ اس نے کہا کہ عراق میں امریکی کارروائی کا مطلب یہ نہیں ہے کہ شام میں بھی امریکہ فضائی حملہ کرے گا۔

TOPPOPULARRECENT