Wednesday , December 19 2018

’’شری رام مندر بننے دو۔ ورنہ پاکستان جانے کی تیاری کرو‘‘

نئی دہلی۔/12ڈسمبر، ( فیکس ) شاہی امام مسجد فتح پوری دہلی مولانا ڈاکٹر مفتی محمد مکرم احمد نے آج نماز جمعہ سے قبل خطاب میں کہا کہ مذہب اسلام کا پیغام تمام انسانوں کیلئے عام ہے اور ہر ایک کو اختیار ہے کہ اپنی پسند سے مذہب کا اختیار سوچ سمجھ کر کرے۔ انہوں نے کہا کہ مذہب اسلام اللہ کا سچا دین ہے اور اس میں تمام اچھائیاں اور خوبیاں موجود ہیں

نئی دہلی۔/12ڈسمبر، ( فیکس ) شاہی امام مسجد فتح پوری دہلی مولانا ڈاکٹر مفتی محمد مکرم احمد نے آج نماز جمعہ سے قبل خطاب میں کہا کہ مذہب اسلام کا پیغام تمام انسانوں کیلئے عام ہے اور ہر ایک کو اختیار ہے کہ اپنی پسند سے مذہب کا اختیار سوچ سمجھ کر کرے۔ انہوں نے کہا کہ مذہب اسلام اللہ کا سچا دین ہے اور اس میں تمام اچھائیاں اور خوبیاں موجود ہیں اسی لئے عام لوگ اسے اپنارہے ہیں۔ شاہی امام نے زور دے کر کہا کہ کسی بھی دور میں زبردستی مسلمان کرنے کا کوئی ثبوت نہیں ہے، الزام دینے والے سچائی کو جھٹلارہے ہیں۔ شاہی امام نے آگرہ میں غریب مسلمانوں کو لالچ دے کر اور خوف و ہراس میں مبتلا کرکے دھوکہ سے دھرم جاگرن منچ کی طرف سے ہندو بنائے جانے کی شدید مذمت کی

اور وزیر اعظم، حکومت ہند، وزیر اقلیتی امور اور وزیر اعلیٰ اتر پردیش سے ان شرارتی لوگوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے اور فرقہ پرست تنظیموں پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا جو زبردستی اعلانیہ مذہب تبدیل کرانے کی باتیں کررہے ہیں، پروگرام بنارہے ہیں اور اس پر فخر کررہے ہیں۔ شاہی امام نے کہا کہ آزادی کے بعد سے ایسے واقعات رونما نہیں ہورہے تھے تو اب کیوں ہورہے ہیں۔ کیا یہ لوگ وزیر اعظم کے مخالف ہیں جو ان کی حکومت کو بدنام کرنا چاہتے ہیں، یا انہیں درپردہ حکومت کی شہ ملی ہوئی ہے۔ زبردستی مذہب تبدیل کرانا سپریم کورٹ کے فیصلہ کے خلاف ہے نیز سیکولر آئین اس کی اجازت نہیں دیتا۔ افسوس تو یہ ہے کہ کچھ مرکزی وزیر بھی ایسی بے بنیاد غیر آئینی باتیں کررہے ہیں۔ وزیر اعظم کو ان کی سرزنش کرنی چاہیئے۔ دھرم جاگرن کی طرف سے ایک خط جو منظر عام پر آیا ہے اس سے ان کے ارادے ظاہر ہیں تو پھر ایسے لوگوں پر پابندی کیوں نہ لگے۔ مسلمان کبھی زبردستی مذہب تبدیل نہیں کراتے اور ہمارا مذہب اسلام بھی اس عمل کی ہرگز اجازت نہیں دیتا جو چاہے جب چاہے اس کی انکوائری کراسکتا ہے۔ شاہی امام نے مسلمانوں سے بھی اپیل کی کہ غرباء و مساکین کی خدمت اور دیکھ بھال میں غفلت نہ کریں اور اس ثواب سے محروم نہ رہیں۔شاہی امام نے کہا کہ پرسوں ہی ڈاک سے مجھے ایک گمنام خط ملا ہے جس میں لکھا ہوا ہے ’’ امام صاحب فتح پوری مسجد، شری رام مندر بننے دو ، امام صاحب فتح پوری مسجد ، ورنہ پاکستان جانے کی تیاری کرو ‘‘۔

شاہی امام نے کہا کہ ہم اس طرح کی حرکتوں کی شدید مذمت کرتے ہیں ۔اگر مرکزی و ریاستی حکومتیں فرقہ پرستوں کے خلاف کارروائی کریں گی تو یہ فتنہ ختم ہوجائے گا ورنہ یہ سب تاریخ میں درج ہوجائے گا اور آنے والی نسل انہیں معاف نہیں کرے گی نیز بین الاقوامی طور پر ملک کی ساکھ خراب ہوجائے گی۔ شاہی امام نے امریکی خفیہ ادارہ کے بہیمانہ طریقہ تفتیش کی شدید مذمت کی اور ان افسران کے خلاف یو این او اور امریکی حکومت سے شدید کارروائی کا مطالبہ کیا اور جارج ڈبلیو بش سابق صدر امریکہ کے دور میں اس طرح کے واقعات زیادہ ہوئے ہیں ان کی اعلیٰ انکوائری ہونی چاہیئے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT