Wednesday , December 12 2018

’’کالے دھن کے بارے میںتمام معلومات کا انکشاف نہیںکیا جاسکتا‘‘ مرکزی حکومت کا سپریم کورٹ میں بیان

نئی دہلی 17 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام )مرکزی حکومت نے آج سپریم کورٹ کے اجلاس پر بیان دیا کہ بیرون ممالک سے کالے دھن کے بارے میں وصول ہونے والی تمام معلومات کا انکشاف نہیںکیا جاسکتا ۔ کیونکہ ان ممالک کے ساتھ ہندوستان کا دوہری محاصل اندازی سے گریز کا معاہدہ موجود ہے ۔ مرکزی حکومت نے اپنی درخواست میںکہا کہ بیرونی ممالک نے ایسی معلومات کے اف

نئی دہلی 17 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام )مرکزی حکومت نے آج سپریم کورٹ کے اجلاس پر بیان دیا کہ بیرون ممالک سے کالے دھن کے بارے میں وصول ہونے والی تمام معلومات کا انکشاف نہیںکیا جاسکتا ۔ کیونکہ ان ممالک کے ساتھ ہندوستان کا دوہری محاصل اندازی سے گریز کا معاہدہ موجود ہے ۔ مرکزی حکومت نے اپنی درخواست میںکہا کہ بیرونی ممالک نے ایسی معلومات کے افشاء پر اعتراض کیا ہے ۔ ایسی تفصیلات کسی بھی دیگر ملک نے ظاہر نہیںکیں۔ جس نے ہندوستان کے ساتھ ایسا معاہدہ کر رکھا ہے ۔ چیف جسٹس ایچ ایل دتو کی زیر قیادت قائم بنچ کے اجلاس پر حکومت کی جانب سے پیش ہوتے ہوئے اٹارنی جنرل موکل روہتگی نے کہا کہ یہ مسئلہ عاجلانہ سماعت کا تقاضہ کرتا ہے ۔ سینئر ایڈوکیٹ رام جیٹ ملانی جن کی درخواست پر سپریم کورٹ نے خصوصی تحقیقاتی ٹیم کالے دھن کے خلاف تشکیل دی ہے مرکز کے اختیار کردہ موقف پر سخت اعتراض رکھتی ہے ۔ رام جیٹھ ملانی نے کہا کہ اس معاملہ کی سماعت نہیں ہوسکتی ۔ ایسی درخواست خاطیوں کی جانب سے کی جانی چاہئے حکومت کی جانب سے نہیں۔ اس معاملے پر ایک دن بھی غور نہیںکیا جاسکتا ۔ انہوں نے کہا کہ مرکز اُن لوگوں کو بچانے کی کوشش کررہا ہے جنہوں نے بیرونی ممالک کے بینکوں میںکالا دھن جمع کر رکھا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT